ریونت ریڈی کے مکان پر انکم ٹیکس حکام کا دھاوا

محکمہ انکم ٹیکس (آئی ٹی) کے عہدیداروں نے جمعرات کو یہاں کانگریس کے کارگذار صدر اے ریونت ریڈی کی قیام گاہوں پر دھاوے کئے ہیں۔ کانگریس پارٹی نے ان دھاؤں کی مذمت کرتے ہوئے اسے ریاست میں برسر اقتدار ٹی آر ایس اور مرکز کی بی جے پی کی سیاسی انتقامی کاروائی قرار دیا ۔ محکمہ انکم ٹیکس کے ایک سینئر عہدیدار نے ریڈی کی قیامگاہ کی تلاشی کی توثیق کی مگر انہوںنے دھاؤں کے محرکات اور اس کی تفصیلات بتانے سے انکار کردیا ۔ ان دھاؤں پر جب ریونت ریڈی کا ردعمل جاننے کی کوشش کی گئی تو انہوںنے اس بارے میں کوئی جواب نہیں دیا۔ ریونٹ ریڈی کو حالیہ دنوں میں پردیش کانگریس کا‘ کارگذار صدر بنایا گیا تھا ۔ جو بلی ہلز کے پولیس انسپکٹر پی چندر شیکھر نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ کسی بھی نا خوشگوار واقعہ کو روکنے کیلئے ریونت ریڈی کی قیام گاہ کے قریب پولیس کا بھاری بندوبست کیا گیا ۔ قبل ازیں سٹی پولیس نے سابق رکن اسمبلی ریونت ریڈی کو2004 کے کوآپریٹیو ہاوزنگ سوسائٹی میں بے قاعدگیوں سے مربوط کیس میں تحقیقات کیلئے پولیس کے سامنے حاضر ہونے کی نوٹس جاری کی تھی ۔ آئی ٹی دھاوں پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے صدر پردیش کانگریس این اتم کمار ریڈی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے ان دھاؤں کو سیاسی انتقام سے تعبیر کیا اور کہا کہ ان دھاؤں کے پس پردہ ٹی آر ایس اور بی جے پی کا ہاتھ ہے ۔انہوں نے کہا کہ ریونت ریڈی کے مکان پردھاوا، سیاسی انتقام ہے جس کا مقصد پارٹی کے مقبول وطاقتور ارکان اسمبلی کے حوصلوں کو پست کرنا ہے ۔ بی جے پی اور مرکزی حکومت سے خفیہ مفاہمت کرنے والے کے سی آر کو عوام ، انتخابات میں مناسب سبق سکھائیں گے ۔ انہوںنے کہا کہ وہ سیاسی محرکات پر مبنی ان دھاوں کی شدید مذمت کرتے ہیں۔ پہلے جگاریڈی کو گرفتار کیا گیا اور اب ریونت ریڈی کی قیامگاہ پر دھاوے کئے گئے جو کے سی آر کی بزدلی کی علامت ہے ۔ ایک اور ٹوئٹ کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے یہ بات کہی ۔ یو این آئی کے بموجب محکمہ انکم ٹیکس کے عہدیداروں نے آج اے ریونت ریڈی کی جوبلی ہلز کی قیام گاہ پر دھاوا کیا جس وقت دھاوا کیا گیا اُس وقت ریڈی اور ان کے افراد خاندان، مکان میں موجود نہیں تھے ۔ ریڈی کی قیامگاہ کے ساتھ ان کے کاروباری اداروں اور دفتر کے علاوہ مختلف مقامات پر ان کے رشتہ داروں کے مکانات پر بھی بیک وقت دھاوے کئے گئے۔ آئی ٹی ذرائع کے بموجب بھوپال انفراسٹرکچر پر ائیوٹ لمیٹڈ اور ریونت ریڈی کے بشمول اس سے مربوط دیگر اداروں پر بھی دھاوئے کئے گئے ۔

جواب چھوڑیں