پاکستانی ٹیم کی ناقص کارکردگی کی تحقیقات کا مطالبہ

پاکستانی ٹیم کے سابق کپتان وسیم باری نے ایشیاء کپ میں قومی ٹیم کی شرمناک پرفارمنس پر انکوائری کروانے اور ٹیم کے پوسٹ مارٹم کا مطالبہ کردیا۔ سابق وکٹ کیپر بیاٹسمین نے کپتان کے بشمول سب کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ بیٹنگ، بولنگ اور فیلڈنگ کے بشمول تمام شعبوں میں ٹیم نے شرم سے سر جھکا دیے۔ گرین شرٹس کا شمار ایشیاء کپ کی فیورٹ ٹیم میں کیاگیا لیکن کارکردگی دیکھ کر دل بہت دکھی ہوا۔ بنگلادیش کے خلاف 244 رنز کا تعاقب آسان تھا جس کو پاکستانی بلے بازوں نے بنا کسی حکمت کے تحت پہاڑ بنادیا۔ وسیم باری نے کہاکہ ونڈے کرکٹ میں جب آپ ٹارگٹ کی طرف جاتے ہیں تو پھر اسکور کو 3 حصوں میں تقسیم کرتے ہیں ۔ 50 اوورز کی کرکٹ میں رنز تک رسائی کیلئے کوئی گیم پلان نظر نہیں آیا، اسی طرح کی پرفارمنس پر پوچھ گچھ نہیں کی جائے گی تو پھر آنے والے میاچس میں بھی نتائج ایسے ہی آئیںگے۔ وسیم باری کے بقول کپتان سرفراز احمد کو فرنٹ سے لیڈ کرنا چاہیے تھا لیکن اس کا یہ مطلب ہرگز نہیں تھا کہ وہ ایک آسان ہدف کو پانے کیلئے بیٹنگ آرڈر تبدیل کرتے، ایسے اچانک فیصلے اس وقت کیے جاتے ہیں جب ہدف زیادہ ہو، پورے ٹورنامنٹ میں ہمارے ہیروز خود اعتمادی کا شکار نظر آئے۔

جواب چھوڑیں