تلنگانہ  میں12  اکتوبر سے بتکماں ساڑیوں کی تقسیم

تلنگانہ میں 12؍ اکتوبر سے خواتین میں بتکماں ساڑیاں تقسیم کی جائیں گی ۔ دسہرہ تحفہ کے طور پر ریاست کی خواتین میں95 لاکھ ساڑیاں تقسیم کی جائیں گی ۔ ریاستی وزیر کے تارک راماراؤ نے یہاں بتکماں ساڑیوں کے مشاہدہ کے بعد کہا کہ تمام تر ساڑیاں سرسلہ پاور لومس کلسٹر میں تیار کی جارہی ہیں ان ساڑیوں کی تیاری پر 280کروڑ روپے کی لاگت آئے گی ۔ رواں سال ہر ایک ساڑی کی تیاری پر290 روپے خرچ کئے جائیں گے ۔ کے ٹی آر نے کہا کہ بتکماں ساڑیوں کی تقسیم کا اہم مقصد بافندوں کو مسلسل روزگار فراہم کرنا، اوران کی اجرتوں میں اضافہ کرتے ہوئے ان کے معیار زندگی کو فروغ دینے کے ساتھ خواتین کو دسہرہ کا تحفہ دینا ہے ۔ ریاست کی خواتین کو اعزاز عطا کرنے کیلئے حکومت نے صنف نازک میں بتکماں ساڑیاں تقسیم کرنے کا بیڑا اٹھایا ہے۔ سیلف ہیلپ گروپس، ایم ای پی ایم اے اور ایس ای آر پی کے نمائندوں کی تجاویز کو مدنظر رکھتے ہوئے اس سال موزوں ڈیزائن کی مخصوص بتکماں ساڑیوں کی تیاریوں کا طریقہ کار اپنایا گیا ہے ۔ تمام ساڑیاں صدفیصد پالیسٹر فلامنٹ ریان سے تیار کی جائیں گی اور ان ساڑیوں پر زری کا بارڈر رہے گا ۔ اور یہ ساڑیاں 80 مختلف شیڈس میں دستیاب رہیں گی۔ریگولر ساڑیاں6.30 میٹر کی رہیں گی جبکہ5لاکھ ساڑیاں 9 میٹر لمبی رہیں گی ان بڑی ساڑیوں کو شمالی تلنگانہ میں معمر خواتین زیب تن کرتی ہیں ۔ انہوںنے مزید کہا کہ سرسلہ کے تقریباً20ہزار پاورلومس میں بتکماں ساڑیاں تیار کی جائیں گی ۔ بتکماں ساڑیوں کے آرڈر سے 16ہزار بافندوں کو روزگار ملے گا اور اس سے مربوط صنعت کو فروغ ملے گا جس سے بافندوں کی معاشی حالت سدھر نے کا امکان ہے ۔ انہوںنے مزید کہا کہ حکومت ، دستی پارچہ کے ورکروں کی اجرت میں ماہانہ8 ہزار سے 16 ہزار روپے تک اضافہ کرنے کے موقف میں ہے اور ان ورکرس کی ماہرانہ صلاحیتوں میں زبردست اضافہ ہوا ہے ۔ اب یہ ورکرس ، ہمہ ڈیزائن کی ساڑیاں بنانے میں ماہربن گئے ہیں۔ کے تارک راما راؤ نے کہا کہ بتکماں ساڑیوں کی تیاریوں سے تقریباً10ہزار خاندانوں کو مالی طور پر فائدہ ہوگا جو ایک اچھی علامت ہے۔ انہوںنے کہا کہ اب تک50لاکھ ساڑیاں اضلاع کو روانہ کی جاچکی ہیں۔ مابقی ساڑیاں، 10اکتوبر تک دستیاب کرائی جائیں گی اور ان بتکماں ساڑیوں کی تقسیم کا آغاز12اکتوبر سے ہوگا ۔ اور تقسیم کا یہ عمل ایک ہفتہ تک جاری رہے گا۔

جواب چھوڑیں