صرف امریکہ کی ثالثی قبول نہیں: محمود عباس

 فلسطینی صدر محمود عباس نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی انتظامیہ پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشرق وسطیٰ تنازعہ کے حل کے لیے واشنگٹن حکومت کی ثالثی قبول نہیں کی جائے گی۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب میں بیاسی سالہ عباس نے کہا کہ خطے میں امن عمل کی خاطر بطور ثالث صرف امریکہ پر اکیلے ہی بھروسا نہیں کیا جا سکتا۔ اس سے قبل امریکی صدر نے کہا تھا کہ وہ اسرائیلی فلسطینی تنازعہ کے حل کی خاطر ’انتہائی منصفانہ‘ امن منصوبہ رکھتے ہیں۔ اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے اس امریکی بیان کی ستائش کی ہے۔

جواب چھوڑیں