کانگریس پر بدعنوان عناصر کی حوصلہ افزائی کا الزام:بی سمن ایم پی

ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ بی سمن نے کانگریس قائدین پر چوروں اور بدعنوان عناصر کی حوصلہ افزائی کا الزام عائد کیا۔ اور صدر کانگریس راہول گاندھی سے مطالبہ کیا کہ وہ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کے کارگذار صدر ریونت ریڈی کو پارٹی سے فوری معطل کردیں ۔ ریونت ریڈی نے اراضیات پر غیر مجاز قبضوں اور دیگر غیر قانونی کاروبار کے ذریعہ کروڑہا روپے کمائے ہیں۔ انہوںنے ریونت ریڈی پر ملک سے غداری کا الزام بھی عائد کیا ۔ رکن پارلیمنٹ پی سمن اور پارٹی کے سینئر قائد جی رام چندر راؤ نے آج یہاں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی اور دیگر قائدین ، ریونت ریڈی کی تائید میں بیانات دے رہے ہیں۔ جبکہ ان قائدین کو معلوم ہونا چاہئے کہ انکم ٹیکس عہدیداروں نے ریونت ریڈی کی رہائش گاہ اور ان کے رشتہ داروں کے مکانات سے غیر قانونی طریقہ سے حاصل کردہ اثاثوں کو ضبط کیا ہے ۔ کانگریس قائدین کو آیا غیر مجاز اثاثہ جات دکھائی نہیں دے رہے ہیں؟۔ سال 2009 کے انتخابات میں ریونت ریڈی نے 3.6کروڑ روپے کے اثاثوں کے دستاویزات پیش کئے تھے ۔ سال 2014 میں ان کے پاس13.2 کروڑ روپے رقم اور اثاثہ جات ہونے کا اقرار کیا تھا۔ انہوںنے کہا کہ صرف4سال میں ریڈی کے پاس کروڑ ہا روپے اور اثاثہ جات کہاں سے آگئے ہیں۔ بی سمن نے ریونت ریڈی پر انکم ٹیکس اور دیگر محکموں کو دھوکہ دینے کا الزام عائد کیا اور کہا کہ ریونت ریڈی کاٹھکانہ اب چنچل گوڑہ یا چرلہ پلی جیل ہونا چاہئے ۔ محکمہ انکم ٹیکس نے پختہ ثبوت کے بعد ریونت ریڈی کے خلاف کاروائی کی ہے ۔ اس میں ٹی آر ایس حکومت کا کوئی رول نہیں ہے ۔

جواب چھوڑیں