اقوام متحدہ میں آسٹریا کی وزیر خارجہ کی عربی میں تقریر

آسٹریا کی وزیر خارجہ کیرین کینیسل نے ہفتے کی شام اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 73 ویں اجلاس میں اپنے خطاب کا آغاز عربی زبان میں کیا۔ کیرین نے بتایا کہ انہوں نے ویانا میں اقوام متحدہ کے دفتر میں اور جنگ کے دوران بیروت میں عربی زبان سیکھی۔خطاب کے لیے عربی زبان کے انتخاب کی وجہ بیان کرتے ہوئے کیرین نے کہا کہ “میں نے یہ اس لیے کیا ہے کیوں کہ یہ اقوام متحدہ کی 6 سرکاری زبانوں میں سے ایک زبان ہے۔ عربی زبان ایک خوب صورت اور اہم زبان ہونے کے ساتھ اہم عرب تہذیب کا حصّہ ہے۔ میں نے جنگ کے دوران بیروت میں لوگوں کے ساتھ رابطہ کرنے کا طریقہ جانا۔ بغداد سے لے کر دمشق تک ایسے مرد اور خواتین ہیں جو مشکل حالات کے باوجود زندگی کا سفر جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ان تمام لوگوں کے لیے مکمل احترام کا اظہار کرتی ہوں۔آسٹریا کی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ “ہم سب آدم کی اولاد ہیں۔ یہاں اس اجلاس میں ہمارے پاس پلیٹ فارم ہے۔ ہمیں چاہیے کہ اس پلیٹ فارم کو بیرونی دنیا بالخصوص مشرق وسطی کے لوگوں کے دکھوں کے لیے آواز اٹھانے کے واسطے استعمال میں لائیں۔

جواب چھوڑیں