ریاست کی ترقی کیلئے حکومت کی ممکنہ مساعی : ہریش راؤ

ریاستی وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ نے سنگاریڈی میں منعقدہ ٹی آر ایس کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے ریاست کی ترقی کیلئے زبردست کام کئے ہیں اور ریاست کو سنہرے تلنگانہ میں تبدل کرنے کی مقدور بھر کوشش کی ہے سابق میں تلنگانہ کو آندھرا ئی حکمرانوں نے نظر انداز کردیا تھا لیکن بر سراقتدار آنے کے بعد ٹی آر ایس نے تلنگانہ کی ترقی کیلئے شب وروز جدوجہد کرتے ہوئے اندرون 4سال ریاست کو ترقی کی دوڑ میں لا کھڑا کردیا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ آنے والے اسمبلی انتخابات میں تلگودیشم اور کانگریس پارٹی آپس میں اتحاد کررہی ہیں جو کہ غیر اخلاقی ہے تلگودیشم پارٹی نے علیحدہ تلنگانہ کی مخالفت کی تھی مخالف تلنگانہ پارٹی سے کیونکر کانگریس اتحاد کرسکتی ہے ۔ اقتدار اور عہدوں کے لالچ میں کانگریس اور تلگودیشم آپس میں مفاہمت کررہے ہیں ۔ انہیں تلنگانہ کی ترقی اور عوام کی بہبود سے کوئی دلچسپی نہیں ہے ۔ تلنگانہ کی ترقی کو جاری رکھنے کے لئے ٹی آر ایس کی دوبارہ کامیابی ضروری ہے ۔ انہوںنے کہا کہ حلقہ اسمبلی سنگاریڈی سے ٹی آر ایس امیدوار چنتا پر بھاکر کی دوبارہ کامیابی یقینی ہے چونکہ چنتا پربھاکر نے عوام کے درمیان رہ کر نہ صرف عوامی مسائل کی یکسوئی کی بلکہ حلقہ کی ترقی کیلئے بھر پور سعی کی ۔ وزیر آبپاشی نے کہا کہ اسمبلی انتخابات ،موافق اور مخالفین تلنگانہ کے درمیان رہیں گے ۔ چنتا پربھاکر ٹی آر ایس امیدوار نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے بحیثیت رکن اسمبلی حلقہ کی ترقی کیلئے2ہزار کروڑ روپے سے زائد کام منظور کروائے ہیں ۔ سابق میں اس کی نظیر نہیں ملتی ۔ انہوںنے کہا کہ وہ بالکل صاف ستھرے انداز میں خدمات انجام دی ہیں اور گذشتہ 4سالوں کے دوران حلقہ میں کسی قسم کا تنازعہ یا امن وامان کا کوئی مسئلہ پیدا نہیں ہوا ۔ انہوںنے عوام سے اپیل کی کہ دوبارہ ووٹ دیکر کامیاب بنایں اور پھر ایک بار انہیں خدمت کرنے کا موقع فراہم کریں ۔ جلسہ سے پہلے سنگاریڈی میں بہت بڑی موٹر سیکل ریالی منظم کی گئی ۔

جواب چھوڑیں