غیر مسلم برادران کو مسجد رحمت عالم کا مشاہدہ کروایا گیا

حیدرآباد میں غیر مسلم برادران وطن نے شہر میں اپنی نوعیت کے پہلے اور منفرد انڈوعرب کلچرل سنٹر کے مجوزہ قیام پر مسرت اور طمانیت کا اظہار کیا ۔انہوں نے یقین ظاہر کیاکہ اس سے اسلامی تعلیمات کو سمجھنے اور مسلمانوں سے قریب ہونے میں مدد ملے گی اور ملک کے موجودہ حالات میں یہ سنٹر باہمی اتحاد اور یکجہتی کا گہوارہ ثابت ہوگا۔ غیر مسلم برادران وطن نے آج انڈوعرب لیگ حیدرآباد کی مسجد رحمتِ عالم کے مشاہدے کے بعد ان خیالات کا اظہار کیا۔ ’’ہماری مسجد کو تشریف لائیے‘‘ پروگرام کے تحت آج مسجد رحمت عالم کے دروازے سماج کے تمام طبقات کیلئے کشادہ کردیئے گئے تھے۔ صبح سے ہی کافی تعداد میں مسجد رحمتِ عالم میں لوگوں کی آمد و رفت کا سلسلہ جاری تھا جن کا والنٹیرس نے استقبال کیا اور انہیں مختلف چارٹس کے ذریعہ مسجد، اذان ، نماز ، وضو، طہارت جیسے امور سے واقف کروایا۔ یہاں یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ مسجد رحمتِ عالم روڈ نمبر 10بنجارہ ہلز میں انتہائی وسیع و عریض رقبہ پر تعمیر کی گئی ہے۔ غالباً یہ شہر کی واحد مسجد ہے جس کے فن تعمیر میں مینار شامل نہیں ہے۔ چیرمین انڈو عرب لیگ حیدرآباد جناب سید وقار الدین نے انڈوعرب لیگ حیدرآباد کے تحت یہ مسجد تعمیر کروائی تھی جس کا سنگ بنیاد ڈسمبر 1993ء میں مفتی اعظم فلسطین نے رکھا تھا۔ ڈاکٹر میر اکبر علی خان نائب صدر نشین انڈوعرب لیگ حیدرآباد نے صحافیوں اور مہمانوں کو انڈوعرب لیگ حیدرآباد سے متعلق تفصیلات سے واقف کروایا کہ 51برس پہلے انڈو عرب لیگ حیدرآباد کا قیام عمل میں آیا تھا جسے اقوامِ متحدہ نے مسلمہ حیثیت دی ہے ۔ جناب سید وقار الدین نے ہند عرب تعلقات کو خوشگوار اور مستحکم بنانے کیلئے جو خدمات انجام دی ہیں۔ جاریہ سال 2؍ اپریل کو اومان کے قومی دن کے موقع پر عرب لیگ کی جانب سے جناب سید وقار الدین کو 22ممالک کے سفیروں کی موجودگی میں خصوصی ایوارڈ سے نوازا گیا جبکہ صدر فلسطین محمود عباس نے انہیں ستارہِ فلسطین کے اعزاز سے سرفراز کیا ۔ مراقش کے علاوہ کئی عرب ممالک نے جناب سید وقار الدین کی خدمات کا اعتراف کیا ہے۔ انڈوعرب لیگ حیدرآباد کی مسجد رحمتِ عالم شہر کی اولین مسجد ہے جہاں سب سے پہلے جائے نماز کی جگہ امپورٹیڈ قالین استعمال کئے گئے اور اس کے بعد شہر کی دیگر مساجد میں یہ سلسلہ جاری ہوا۔ انڈوعرب لیگ حیدرآباد کی مسجد رحمت عالم کے ساتھ ساتھ انڈوعرب کلچرل سنٹر ‘ اسلامی کلچرل میوزیم نادر و نایاب کتابوں پر مشتمل لائبریری اور ایک وسیع و عریض ہمہ مقصدی آڈیٹوریم کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے جہاں ہند عر ب تعلقات کے ساتھ ساتھ مسلمانوں اور دیگر فرقوں کے ساتھ مختلف موضوعات پر سمپوزیم ، سیمینارس منعقد ہونگے اور بین الاقوامی شہرت یافتہ شخصیات کے لکچرس کا اہتمام کیا جائے گا۔جناب سیداحمد امیر الدین نے بھی مہمانوں کو تفصیلات سے واقف کروایا جبکہ جناب ملایوسف ، جناب سید امجد ،محمد احمد خان صاحب ، ملک فیصل، سلطان احمد، عبدالرحمن نے انتظامات کی نگرانی کی۔

جواب چھوڑیں