مدھیہ پردیش میں وزارت گاؤ بنائی جائے گی :شیوراج

 مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے کہا ہے کہ ریاست میں وزارت گاؤ قائم کی جائے گی یہ محکمہ گائیوں کی نسل کے تحفظ اور ان کی افزائش سے متعلق کام کرے گا۔انہوں نے کہا کہ جگہ کی دستیابی کے مطابق ہی گؤ شالائیں بنائی جائیں گی۔ چوہان آج ضلع کے نریاولی میں کڑان۔ستگڑھ آبپاشی کے منصوبے، سرکاری صنعتی ادارے اور وزیر اعلی سروور منصوبہ بندی کے 387 کروڑ روپے سے زیادہ کے کاموں کے بھومی پوجن کے بعد عوامی ریلی سے خطاب کیا۔ انہوں نیکہا کہ کسانوں کو محنت کا پورا پیسہ دلانے اور غریب کے فلاح کے جو کام ریاست میں ہوئے ہیں وہ دنیا میں کہیں نہیں ہوئے ہیں۔ غریبوں کے لئے تعلیم کے شعبے میں حکومت نے اہم فیصلہ کیا ہے۔ اب غریب کے بچے کو اسکو ل سے یونیورسٹی تک کی تعلیم کی پوری فیس سرکار مہیا کرائے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ خاتون کی زندگی کو مزید بہتر بنانے کی سمت میں بھی حکومت نے کئی اہم کام کئے ہیں۔ لاڈلی لکشی یوجنا، معصوم بچیوں کی عصمت دری کرنے والے کو پھانسی دینے کا قانون بنانے اور خواتین کو سرکاری نوکریوں میں ریزرویشن وغیر ہ کا انتظامات کرنے میں ریاست پیش پیش رہی ہے۔ چوہان نے بتایا کہ ریاست کے شہر ساگر میں 5000 کروڑ روپے کے کام جاری ہیں۔ ساگر ضلع کے کسانوں کو 105 کروڑ 20 لاکھ روپے بھاواتر منصوبہ بندی میں 45 کروڑ 40 لاکھ روپے، خشک سالی کے لئے 148 کروڑ روپے، فصل انشورنس میں 242 کروڑ روپے، گندم کے کسانوں کو گزشتہ سال کے لیے 45 کروڑ 40 لاکھ روپے دیئے گئے ہیں۔امدادی قیمت پر گندم 1735 میں خریدا گیا۔ پردیش کے کسانوں کو 265 روپئے فی کوئنٹل الگ سے حکومت نے دیئے ہیں۔ چنا سرسوں کی خریدی میں بھی 100 روپے فی کوئنٹل کا اضافی کیا گیاہے۔انہوں نے بتایا کہ ضلع کے غریبوں کے 106 کروڑ 44 لاکھ روپے کا بجلی بل حکومت نے بھرا ہے۔

جواب چھوڑیں