جس دن ہندوؤں کا خون کَھولے گا‘ متھرا ‘ایودھیا اور کاشی پر قبضہ کرلیں گے‘ مرکزی وزیرگیری راج سنگھ

مرکزی منسٹر آف اسٹیٹ برائے مائیکرو‘ اسمال ومیڈیم انٹرپرائزس‘ گیری راج سنگھ نے آج کہا ہے کہ ’’ جس دن ہندوؤں کاخون کَھولے گا‘ وہ متھرا‘ ایودھیا اور کاشی پر قبضہ کرلیں گے‘‘۔ اُنہوںنے مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر میں مدد دیں۔ گری راج سنگھ نے دعویٰ کیا کہ مسلمان بھی ’’لارڈ رام کی اولاد ہیں اور بابر کی نہیں ہیں‘‘۔ اُنہوںنے زوردیکر کہاکہ اگر مسلمان‘ رام مندر کی تعمیر مدد نہیں کرتے تو ’’ مجھے دُکھ ہوگا کیونکہ مسلمان بھی ‘ لارڈ رام کی اولادوں سے تعلق رکھتے ہیں نہ کہ بابریا اُس کے نسب سے ‘‘ ۔ ’’ اگر ہندوؤں کا پیمانہ صبر لبریز ہوجائے تو وہ متھرا‘ ایوھیا اور کاشی پر قبضہ کرلیں گے‘‘۔ مرکزی وزیر نے کانگریس پر بھی شدید تنقید کی اور الزام لگایاکہ صدر کانگریس راہول گاندھی نے لارڈ شیوا کی پوجاکرنے والے اور ’’ ہر ہر مہادیو‘‘ کا نعرہ لگانے والے پارٹی کارکنوں کو ‘ پارٹی سے خارج کردیا۔ سنگھ نے اپنی برہمی جاری رکھتے ہوئے کہا ’’ اگر آپ سچے ہندو ہیں تو اپنی ضیافتوں میں گائے کا گوشت کھانا ترک کردیں اور انتخابات سے عین قبل مندروں کے دورے کرنا روک دیں‘‘۔ یہاں یہ تذکرہ بیجانہ ہوگا کہ سنگھ نے قبل ازیں بھی یہ کہتے ہوئے تنازعہ کھڑا کردیا تھا کہ مسلمانوں‘ کوایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کی تائید کرنی چاہئے۔ اُنہوںنے کہاتھا کہ ’’ میں سمجھتاہوں کہ ہمارا گروپ طاقتور تر ہے ۔ ہم‘ عدالت کے فیصلہ کا احترام کریں گے لیکن میں کہوں گا کہ جس طرح سے ہمارے شیعہ بھائیوں نے رام مندر کی تعمیر کی تائید کی ہے ‘ ہمارے مسلمان بھائیوں کو بھی ایسا کرنا چاہئے اور ضد تر کرنی چاہئے کیونکہ ہم دونوں ہی ہندوؤں کی اولادوں سے ہیں‘‘۔

جواب چھوڑیں