جگتیال میں دو طلبہ نے ایک دوسرے کو آگ لگالی

جگتیال ٹاؤن میں پیش آئے اندوہناک واقعہ میں ایس ایس سی کے دو طلبہ جو مبینہ طور پر ایک لڑکی سے تعلقات رکھتے تھے، جھڑپ کے دوران زندہ جل گئے۔ یہ افسوسناک واقعہ کل پیش آیا۔ پولیس نے شبہ ظاہرکیا کہ ان دوطلبہ نے ، شراب پینے کے بعد جن کی عمریں 16 سال بتائی گئی ہیں، اتوار کی شب ایک دوسرے کو زندہ جلالیا۔ یہ واقعہ ‘ حیدرآباد 190 کیلومیٹر جگتیال ٹاؤن میں پیش آیا۔ جس میں کے مہندربرسرموقع ہلاک ہوگیا جبکہ روی تیجا، ہاسپٹل میں زخموں سے جانبر نہ ہوسکا۔ ان دونوں لڑکوں کے خاندان کے افراد نے دعویٰ کیاکہ اس موقع پر ایک تیسرا طالب علم بھی موجود تھا اس دعویٰ کے بعد یہ واقعہ ایک دلچسپ موڑلے لیا۔ پولیس ، دونوں لڑکوں کے افراد خاندان کے دعویٰ کی چھان بین کررہی ہے۔ مقام واقعہ کے قریب سے شراب کی بوتلیں اور سل فونس دستیاب ہوئے ہیں۔ مہندر اور روی دونوں ، ہم جماعت تھے اور یہ دونوں ایک مشنری اسکول میں زیرتعلیم تھے۔ بتایاجاتا ہے کہ یہ دونوں لڑکے، ایک ہی لڑکی سے پیارکرتے تھے۔ یہ لڑکی بھی اسی اسکول میں پڑھتی ہے۔ تحقیقاتی آفیسر، دونوں طلبہ کے سل فونس ڈاٹا کا تجزیہ کررہے ہیں۔ مہندر اور روی نے ایک دوسرے پر پٹرول چھڑک کر آگ لگادی، پولیس یہ سمجھنے سے قاصر ہے کہ ان دونوں کی موت قتل ہے یا پھرخودکشی !

جواب چھوڑیں