گاندھی جی کے پڑپوتے تشار گاندھی ڈانڈی یاترا روڈ پر 400کلومیٹر لمبی مراتھن کا انعقاد کریں گے

مہاتما گاندھی کے پرپوتے تشار گاندھی باپو اور ان کی اہلیہ کستوربا کی 150ویں سالگرہ کے موقع پر یہاں سابرمتی سے دانڈی تک تقریباََ 400کلومیٹر لمبے تاریخی روڈ پر اپنے طرح کی دنیا کی پہلی میراتھن منعقد کریں گے جسے ایک منفرد ریکارڈ کے طورپر گنیز بک آف دی ورلڈ ریکارڈ میں درج کیا جاسکتا ہے ۔باپو کے بیٹے منی لال گاندھی کے پوتے تشار گاندھی نے آج یہاں ایک پریس کانفرنس میں کہاکہ نمک قانون کو توڑنے کے لئے باپو کی طر ف سے مارچ 1930میں کی گئی دانڈی یاترا کے روڈ یعنی قومی شاہراہ نمبر 64پر منعقد ہونے والی یہ میراتھن کئی معنی میں اپنی طرح کی منفرد ہوگی۔انہوں نے کہاکہ آئندہ برس مارچ میں دانڈی سالٹ چیلنج نامی پروگرام کے تحت اس میراتھن کے ساتھ ہی 400کلومیٹر لمبی سائکل ریس اور بھیمرڈ سے دانڈی تک 70کلومیٹر کی پیدل یاترا کا بھی انعقاد ہوگا۔ بھیمرڈ وہ جگہ ہے جہاں باپو نے دانڈی یاترا کے دوران سب سے پہلے نمک اٹھایا تھا۔اس کی تاریخی اہمیت کو لوگوں کی یاد میں تازہ رکھنے کے لئے پیدل یاترا کا انعقاد وہاں سے ہوگا۔ یہ تینوں پروگرام اس کے بعد ہر برس منعقد ہوں گے ۔ تشار گاندھی نے کہاکہ 2005میں انہوں نے دانڈی یاترا کے 75ویں برس میں اس راستے اس کا پھرسے انعقاد کیا تھا اور اس کی وجہ سے اس وقت کی منموہن سنگھ حکومت نے اس راستے کو دانڈی وراثت روڈ اور وہاں دانڈی میوزیم کا اعلان کیا تھا۔ اس بارامید ہے کہ اس پروگرام کے بعد بھیمرڈمیں ایک میوزیم بنے گا۔ گاندھی نے بتایا کہ میراتھن 12سے 22 مارچ تک منعقد ہوگی اورحقیقت میں اس دوران ہر روز صبح اور شام کو 21-21کلومیٹر کی ددو ہاف میراتھن ہونگی۔ اس طرح مجموعی طورپر 19ہاف میراتھن ہوں گی۔اس میں لوگوں کو ریلے دوڑ کی طرز پر دو ، تین یا چار کی ٹیم میں بھی حصہ لینے کی چھوٹ ہوگی۔ سائکل ریس سابرمتی سے دانڈی تک 400کلومیٹر کی ہوگی۔ باپو سے وابستہ اس پروگرام کا انعقاد اس سے زیادہ سے زیادہ نوجوانوں کو جوڑنے کے لئے کیا گیا ہے ۔ تینوں پروگراموں میں مجموعی طورپر 25000لوگوں کے حصہ لینے کی امید ہے ۔ اس کے لئے رجسٹریشن کا کام آئندہ مہینہ سے شروع ہوگا اور اس میں کئی معروف رنر حصہ لیں گے ۔ رجسٹریشن کرانے والے عام لوگوں کو معروف میرتھن رنر ڈینیل واج تربیت دیں گے ۔اس پروگرام کا موضوع ‘کرکے دیکھو’ رکھا گیا ہے جو باپو نے انکی دانڈی یاترا کی شروعات میں مخالفت کرنے والے موتی لال نہرو کے ایک خط کے جواب میں لکھا تھا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ گاندھی جی کا سردار پٹیل کا کوئی اختلاف نہیں تھا۔ دانڈی یاترا سے پہلے اس کی تیاری کے دوران برطانوی حکومت نے انہیں جیل بھیج دیا تھا۔

جواب چھوڑیں