رونالڈو کے اربوں روپے کے معاہدے خطرے میں

 امریکہ کی سابق ماڈل اور ٹیچرکیھرین مایورگا کی جانب سے پرتگال کے شہرت یافتہ فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈو پر ‘ریپ’ الزامات لگائے جانے کے بعد فٹ بالر کے اربوں روپے کے کاروباری معاہدے خطرہ میں پڑ گئے ہیں۔33 سالہ فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈو سے اربوں روپے کے اشتہاراتی معاہدے کرنے والی عالمی اسپورٹس کمپنیوں ‘نائیکی’ اور ‘ای اے اسپورٹس’ نے ان پر ریپ الزامات لگائے جانے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔گزشتہ ماہ ستمبر میں امریکی ماڈل کیتھرین مایورگا نے کرسٹیانو رونالڈو پر 2009 میں ریپ کا الزام عائد کرتے ہوئے امریکی ریاست نیواڈا کی ڈسٹرکٹ کورٹ میں ایک 32 صفحے کی شکایت داخل کراتے ہوئے فٹ بالر پر 2 لاکھ امریکی ڈالر کے ہرجانے کا دعویٰ بھی کیا۔درخواست میں ماڈل نے دعویٰ کیا کہ فٹ بالر نے انہیں جون 2009 میں اپنے پینٹ ہاؤس پرریپ کا نشانہ بنایا اور بعد ازاں فٹ بالر نے وکلاء کی مدد سے انہیں پونے 4 لاکھ ڈالر دے کر خاموش رہنے کا کہا۔عدالت میں دائر کی گئی درخواست میں کہا گیا کہ ریپ واقعے کے بعد ماڈل ذہنی طور پر پریشان رہیں، یہاں تک کہ انہوں نے متعدد بار خودکشی کرنے کا بھی سوچا۔درخواست میں فٹ بالر کے خلاف ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا گیا تھا، درخواست دائر ہونے کے بعد لاس اینجلس پولیس نے اعلان کیا کہ وہ کرسٹیانو رونالڈو کے خلاف تحقیقات کا دوبارہ آغاز کریں گے۔ائیکی کے ترجمان نے بتایا کہ اگرچہ فوری طور پر کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔

جواب چھوڑیں