وعدے کرنا اور مکر جانا کے سی آر کا وطیرہ : محمد علی شبیر

اقتدار پر فائز ہونے کے بعد کانگریس کسانوں کے تمام مسائل حل کردے گی ۔ ان خیالات کااظہار قائد اپوزیشن قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے حلقہ اسمبلی کا ماریڈی کے بھکنور منڈل کے تپا پور میں منعقدہ کانگریس کے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ ابتداء میں محمد علی شبیر کا موضع تپا پور پہنچنے پر عوام نے ان کا شاندار خیرمقدم کیا ۔ کسان، بیل بنڈی ، بیانڈ باجے کے ساتھ جلوس میں شریک رہے ۔ خواتین نے بونال نکالا اور ان کا شاندار خیر مقدم کیا ۔ محمد علی شبیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹی آر ایس کے دور اقتدار میں ہر کوئی پریشان ہے ، کسانوں ، خواتین ، دلت ، معمرین ، معذورین ، بیروزگار نوجوانوں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے ۔ دلت طبقہ میں فی کس3ایکر اراضی کی تقسیم کا وعدہ وفانہ ہوسکا ۔ فیس ریمبرسمنٹ کے حصول کیلئے طلبا ء بیحد مشکلات کا سامنا کررہے ہیں۔ دوسری جانب روزگار کے حصول کیلئے نوجوان پریشان ہیں۔ کانگریس برسراقتدار آتے ہی کسانوں کے مسائل کو سب سے پہلے حل کردے گی ۔ مستحق افراد میں امکنہ کی تقسیم عمل میں لائی جائے گی ۔ انہوںنے کہا کہ دیہی عوام بالخصوص خواتین نے جس طرح جوش وجذبہ کا اظہار کیا ہے اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ٹی آر ایس کا اقتدار سے بیدخل ہونااب یقینی ہے۔ اس موقع پر بھکنور ٹی آر ایس کے کئی کارکنوں نے محمد علی شبیر پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کرلی ۔ محمد علی شبیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب کانگریس برسر اقتدار تھی تب کروڑہا روپیوں کے ترقیاتی کام انجام دئیے گئے ۔ سری رام ساگر سے کاماریڈی تک170 کیلو میٹر طویل آبرسانی پائپ لائن بچھائی گئی ہے۔ انہوں نے کانگریس کارکنوں کو مشورہ دیا کہ وہ ایک سپاہی کی طرح آج سے 7دسمبر تک اپنے آپ کو پارٹی کیلئے وقف کردیں تب ہی کانگریس امیدواروں کی کامیابی یقینی ہوگی ۔ اس موقع پر وینو گوپال گوڑ، کیلاش سرینواس راؤ، اشوک ریڈی، اندرا کرن ریڈی ، ہری کشن گوڑ، محمد احمد اللہ خان، محمد جمیل کونسلرو دیگر موجود تھے ۔

جواب چھوڑیں