پیانگ یانگ میں شمالی اور جنوبی کوریا کے درمیان اعلی سطحی اجلاس

پیانگ یانگ میں کل شمالی اور جنوبی کوریا کے درمیان اعلی سطح کا ایک اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس کا مقصد گزشتہ ماہ شمالی کوریا کے سربراہ کِم یونگ اْن اور جنوبی کوریا کے صدر مون جائے اِن کے درمیان ملاقات میں ہونے والیمعاہدوں کے اطلاق کو زیر بحث لانا تھا۔کل ہونے والے اجلاس میں جنوبی کوریا کی جانب سے یک جہتی کے وزیر چو میونگ گیون اور کوریا کے امور سے متعلق شمالی کوریا کی ایجنسی کے سربراہ ری سون گوان نے شرکت کی۔جنوبی کوریا کا وفد امن بات چیت کے لیے جمعرات کے روز پیونگ یانگ پہنچا تھا۔شمالی کوریا کے عہدے دار ری سون گوان نے اجلاس میں جنوبی کوریا کے وزیر چو میونگ گیون کی کئی منٹ تاخیر سے آمد پر برہمی کا اظہار کیا۔ اس پر چو میونگ ہنس پڑے اور انہوں نے اپنے ہاتھ کی گھڑی کو ملامت کا نشانہ بنایا جو 30 منٹ پیچھے تھی۔گزشتہ ماہ پیونگ یانگ میں منعقد آخری سربراہ اجلاس میں کم یونگ اور مون جائے نے کہا تھا کہ وہ دونوں ملکوں کے درمیان روایتی عسکری خطرے کو کم کرنے اور غالبا سال بھر کے اندر سیؤل میں ایک اور سربراہ اجلاس کے انعقاد پر متفق ہو گئے ہیں۔کل یہ اجلاس ایسے وقت میں منعقد ہوا جب کہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو اتوار کے روز پیونگ یانگ کا چوتھا دورہ کرنے کی تیاری کر رہے ہیں۔ اس دورے کا مقصد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور شمالی کوریا کے سرباہ کم یونگ اْن کے درمیان دوسری سربراہ ملاقات کے لیے راہ ہموار کرنا ہے۔

جواب چھوڑیں