گجویل سے کے سی آر کے خلاف انتخاب لڑنے غدر کی خواہش

مشہور انقلابی گلوکار غدر نے کہا کہ نگرانکار چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو کی غلط پالیسیوں اور ریاست میں کے سی آر کی جانب سے متعارف کردہ نئے زمینداری نظام سے عوام کو اجاگر کیا جائے گا۔ عوام میں مقبول انقلابی سنگر غدر نے آج حلقہ اسمبلی گجویل سے ٹی آر ایس سربراہ ونگرانکار چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائوکے خلاف انتخابات لڑنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے اور کہا کہ وہ‘ گجویل سے بحیثیت آزاد امیدوار انتخاب لڑنے کے خواہاں ہیں۔ غدر نے چیف الیکٹورل آفیسر (سی ای او) تلنگانہ رجت کمار سے بھی ملاقات کی اور کہا کہ وہ ریاست بھر میں ووٹ کی اہمیت کے تعلق سے عوام میں شعور بیدار کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔ غدر نے کہا کہ مختلف سیاسی جماعتیں اور انتخابی میدان میں موجود امیدوار‘ پیسہ اور شراب کا پیشکش کرتے ہوئے رائے دہندوں کو اپنی جانب لبھانے کی کوشش کرتے ہیں۔ عوام کا پیسہ ہی عوام کو دیا جارہا ہے چاہے کچھ بھی ہو‘ وہ‘ نئے زمینداری نظام‘ ملی نیشنل کمپنیوں اور امیر صنعت کاروں کے خلاف جنہوں نے ٹی آر ایس حکومت سے بہت زیادہ فائدہ اٹھایا ہے‘ مہم چلانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ زمین‘ پانی‘ روزگار اور دیگر حقوق کے حصول کیلئے غریب افراد اور کئی طلبہ نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے تب جاکر علیحدہ تلنگانہ کا قیام عمل میں آیا ہے مگر ان غریبوں اور طلبہ کو علیحدہ تلنگانہ کے ثمرات نہیں ملے ہیں۔ کے چندرشیکھر رائو نے خود کیلئے اور اپنے افراد خاندان کیلئے محل نما عمارت تعمیر کی ہے۔کے سی آر اور ان کے افراد خاندان‘ اقتدار کے مزے لوٹ رہے ہیں۔ غدر نے مزید کہا کہ بے گھر غریبوں کو اب تک ڈبل بیڈرومس مکانات نہیں ملے ہیں‘ غریب دلتوں کو فی کس تین ایکر اراضی کی فراہمی کا وعدہ بھی پورا نہیں کیا گیا۔ نوجوانوں کو سرکاری ملازمتیں بھی فراہم نہیں کی گئیں۔ غریب مریضوں کو آروگیہ شری اسکیم سے کوئی فائدہ نہیں ہورہا ہے۔ ریاست میں کے جی تا پی جی مفت تعلیم کا بھی وعدہ برفدان کی نذر ہوچکا ہے۔ ان تمام مسائل کو وہ‘ اپنی مہم کے دوران اٹھائیں گے اور حکومت کی ناکام پالیسیوں سے عوام کو واقف کرائیں گے۔ ابتداء میں وہ‘ ریاست کے تمام 31اضلاع میں صحافت سے ملاقات پروگرام میں شرکت کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ انقلابی شاعر غدر نے کہا کہ وہ تمام اپوزیشن جماعتوں سے اس بات کی خواہش کریں گے کہ گجویل سے کسی پارٹی امیدوار کو نہ ٹہرائیں اور میری تائید کریں۔ انہوں نے کہا کہ طلبہ نے مجھ (غدر) سے خواہش کی ہے کہ وہ گجویل سے پرچہ نامزدگی داخل کریں۔

جواب چھوڑیں