آندھرا پردیش میں ’’تتلی‘‘ طوفان کی تباہی،8ہلاک

تتلی‘طوفان کے سبب سریکاکولم ضلع میں اب تک8افراد کی موت ہوگئی ہے۔ مہلوکین کی تعداد میں اضافہ ہونے کا امکان ہے۔ تتلی طوفان نے جمعرات کی صبح آندھرا پردیش کے سریکاکولم ضلع کے وجرپوکوتور منڈل پلے سارتھی کے پاس ساحل سمندر عبور کیا۔ ساحل عبور کرتے وقت طوفان نے تباہی مچائی۔ طوفان کے سبب 140تا150کلومیٹرفی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں۔ طوفان کے ساحل عبور کرنے کے بعد بھی پرجپوکوتور، سوم پیٹ اور دیگر منڈلوں میں تیز ہوائیں جاری ہیں۔ کئی ندیاں اور نالوں میں طغیانی آچکی ہے۔ بے شمار مکانات کی چھتیں اڑگئیں۔ درخت اور کھمبے اکھڑگئے۔ شمالی آندھرا میں تیز ہوائوں کے ساتھ بارش جاری ہے۔ سریکاکولم ۔مغربی بنگال کا راستہ بند کردیا گیا ہے۔ دوسری جانب وجئے نگرم اور سریکاکولم ضلع میں آج اور کل ہونے والے انٹرامتحانات ملتوی کردیے گئے ہیں۔ تعلیمی اداروں کو تعطیل کا اعلان کردیا گیا۔ اس کے علاوہ دوواڑا، وجئے نگرم اور کھوردا اسٹیشنوں پر ٹرینوں کو روک دیا گیا ہے۔ کلنگا پٹنم اور بھیملی پٹنم کے پاس10؍نومبر کی وارننگ جاری کی گئی ہے۔ اسی طرح وشاکھااور گنگ ورم بندرگاہ پر8؍ نومبر کی وارننگ جاری کی گئی ہے۔ طوفان کے ساتھ ہورہی شدید بارش کے سبب اُپاڑا۔کاکیناڈا بندرگاہ پوری طرح سے تباہ ہوچکی ہے۔سریکاکولم ضلع میں بجلی کی سربراہی مسدود ہوگئی ہے۔ کلکٹر دفتر میں کمانڈنگ کنٹرول کمیونی کیشن سنٹرقائم کیاگیا ہے۔ عہدیدار حالات پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں اور حالات کا جائزہ لے رہے ہیں۔ ساتھ ہی ٹول فری نمبر 18004250002 بھی جاری کیا گیا ہے۔ عہدیدار طوفان میں پھنسے افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنے میں مصروف ہیں۔ صورت ِ حال سے نمٹنے کے لیے این ڈی آر ایف ٹیموں کو تعینات کیا گیا ہے۔آندھرا پردیش کے چیف منسٹر‘ عہدیداروں سے رابطہ کرکے حالات کی جانکاری لے رہے ہیں۔ ساتھ ہی انہوں نے عہدیداروں کو صورت ِ حال سے نمٹنے کے لیے ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت ہے۔ علاوہ ازیں چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈ ‘ سریکاکولم ضلع کے طوفان سے متاثرہ علاقو ںکا دورہ کریں گے اور امدادی اقدامات کا شخصی طور پر معائنہ کریں گے۔ انہوں نے طوفان سے متاثرہ مواضعات کے عوام سے طوفان کے دوران گھروں سے باہر نہ نکلنے کی اپیل کی تا کہ انسانی جانوں کا اتلاف نہ ہو اور حکام کو راحت اور بازآباد کاری اقدامات کرنے کی ہدایت دی۔ چیف منسٹر نے تلگودیشم کے پارٹی کارکنان اور رضاکارانہ تنظیموں سے بھی حکام سے تعاون کرتے ہوئے امدادی اقدامات میں حصہ لینے کی اپیل کی۔طوفان ’’تتلی‘‘ نے جمعرات کی الصبح ملک کے مشترقی ساحل سے ٹکرانے کے بعد آندھراپردیش کے اضلاع سریکاکولم اور وجیا نگرم میں زبردست تباہی مچادی جس کے نتیجہ میں 8افراد ہلاک ہوگئے ۔ محکمہ موسمیات کے بموجب آج صبح 4:30 بجے تا 5:30 بجے کے درمیان طوفان تتلی ضلع سریکا کولم کے پلاساکے ساحل کوعبور کیاہے ۔ اس وقت 150 تا 160 کیلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی تھیں۔ آندھراپردیش ڈیزاسٹرمینجمنٹ اتھاریٹی نے بتایا کہ طوفان تتلی نے اضلاع سریکا کولم اور وجیا نگرم میں زبردست تباہی مچادی ہے اور چہارشنبہ کی رات سے ان دواضلاع میں شدید بارش ہورہی ہے جس سے عام زندگی درہم برہم ہوگئی ہے ۔ گوڑی واڑہ اگراہام موضع میں درخت گرنے سے 62 سالہ شخص ہلاک ہوگیا جبکہ ضلع سریکاکولم کے روتاناسامیں مکان منہدم ہونے سے ایک 55سالہ شخص ہلاک ہوگیا۔ چیف منسٹرآفس (سی ایم او) نے بتایا کہ دیگر جو 6افراد ہلاک ہوئے ہیں وہ ماہی گیر ہیں۔ کاکینا ڈابندرگاہ سے چنددنوں قبل ماہی گیروں کی 67 کشتیاں سمندر میں گئی تھیں جن میں سے 65 کشتیاں ساحل پر پہنچ چکی ہیں جبکہ مابقی دوکشتیوں کی تلاش جاری ہے ۔ ضلع سریکا کولم میں طوفان تتلی نے زبردست تباہی مچادی ہے ۔ ضلع میں سڑکیں تباہ ہوگئیں جبکہ برقی سربراہی نظام مفلوج ہوگیا ہے کم وبیش 2ہزار کے قریب برقی پولس گرپڑے ۔ ضلع کے 6ٹائونوں اور 4,319 مواضعات میں برقی نظام شدید طورپر متاثر ہواہے ۔ ساوتھ سنٹرل ریلوے اور ایسٹ کوسٹ ریلویز نے درمیان میں کئی ٹرین سرویسس کومنسوخ کردیا اور چندٹرینوں کا رخ دوسری جانب موڑ دیاہے ۔ طوفان تتلی شمال مشرقی سمت مغربی بنگال کی طرف پیش رفت کررہاہے اوریہ طوفان تبدریج کمزور پڑجائے گا۔

جواب چھوڑیں