دامودرراج نرسمہا کی اہلیہ بی جے پی میں شامل

پردیش کانگریس تلنگانہ کوآج اس وقت شدید جھٹکہ لگاجبکہ پارٹی کے سینئرقائد ‘سابق ڈپٹی چیف منسٹر اورکانگریس کے انتخابی منشور کمیٹی کے صدرنشین دامودرراج نرسمہا کی اہلیہ سی پدمنی ریڈی جوخود پارٹی کی سینئر قائد تھیں ‘ بی جے پی میںشامل ہوگئیں۔ سی پدمنی ریڈی نے جمعرات کوبی جے پی کے ریاستی دفتر پہنچ کر زعفرانی پارٹی میں شامل ہوگئیں۔ ڈاکٹر کے لکشمن اور پارٹی کے جنرل سکریٹری پی مرلیدھر رائو کی موجودگی میں پدمنی ریڈی نے بی جے پی میں شمولیت اختیارکرلی۔ اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے پدمنی ریڈی نے کہاکہ وہ وزیر اعظم کے زبردست حامی ہیں ۔مودی کی جانب سے عوام کی بہبود کیلئے اٹھائے گئے اقدامات سے متاثرہوکر انہوں نے بی جے پی میںشامل ہونے کافیصلہ کیاہے ۔ انہوں نے کہاکہ اگربی جے پی انہیں حلقہ اسمبلی سنگاریڈی سے امیدوار بناتی ہے تو وہ یقینا اس حلقہ سے اپنی کامیابی درج کرائیں گی ۔ جب ان سے یہ پوچھاگیا کہ آیا آپ کے شوہر دامودر راج نرسمہابھی بی جے پی میں شامل ہوںگے ؟توانہوںنے اس کا جواب دینے سے انکار کردیا۔ بتایا جاتاہے کہ سی پدمنی ریڈی کو امیدتھی کہ سنگاریڈی سے انہیں کانگریس ٹکٹ دے گی مگرپارٹی نے اس حلقہ سے سابق رکن اسمبلی جگا ریڈی کو امیدوار بنانے کی اسکریننگ کمیٹی سے سفارش کی ہے ۔ کانگریس کے فیصلہ سے مایوس ہوکر پدمنی ریڈی نے بی جے پی میں شامل ہونے کافیصلہ کیا ہے ۔ ریڈی کی بی جے پی میں شمولیت سے ریاست میں زعفرانی پارٹی کو ایک نئی طاقت ملے گی۔ جبکہ دامودھر راج نرسمہا رکوان کے آبائی حلقہ اندول میں سخت مقابلہ کا سامنا ہے کیونکہ اس حلقہ سے فلمی اداکاربابوموہن کوبی جے پی ٹکٹ دینے والی ہے ۔ بابوموہن حال ہی میں بی جے پی میںشامل ہوئے ہیں۔ بی جے پی کے جنرل سکریٹری مرلیدھر رائو نے پدمنی ریڈی کے پارٹی میں شامل ہونے پر مسرت کااظہار کیااور انہوں نے منادرکے احیاء میںپدمنی ریڈی کے رول کی ستائش کی ۔ صدر ریاستی بی جے پی ڈاکٹر کے لکشمن نے کہاکہ شوہر اور بیوی کی مختلف سیاسی جماعتوں سے وابستگی غلط بات نہیںہے ۔

جواب چھوڑیں