برسراقتدارآنے پرپرگتی بھون کوہاسپٹل میں تبدیل کیاجائے گا :اتم کمارریڈی

صدرپردیش کانگریس تلنگانہ این اتم کمار ریڈی نے آج کہاہے کہ کانگریس کے برسر اقتدارآنے پرچیف منسٹر کی سرکاری رہائش گاہ پرگتی بھون کوہاسپٹل میں تبدیل کردیا جائے گا۔ انہوںنے کہاکہ کے سی آر نے اپنے خاندان کی رہائش کے لئے بیگم پیٹ میں 9 ایکر اراضی پر 500کروڑ روپیہ کی لاگت سے عالیشان محل نما پرگتی بھون تعمیر کیا ہے اور وہ اس رہائش گاہ سے آمرانہ حکومت چلارہے ہیں۔ کانگریس برسراقتدارآنے پرپرگتی بھون کوعوامی دواخانہ میں تبدیل کیا جائے گا اور ریاست میں جمہوریت کو بحال کیاجائے گا۔ نظام آباد کے ٹی آرایس رکن کونسل بھوپتی ریڈی نے آج 30ایم پی ٹی سی ارکان اور 50 سابق سرپنچوں کے ساتھ گاندھی بھون پہنچ کر کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کی ۔ این اتم کمارریڈی نے انہیں کھنڈ واپہناکر کانگریس پارٹی میں ان کی شمولیت کا اعلان کیا۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں اتم کمار ریڈی نے اس یقین کااظہار کیاکہ 12دسمبر کوتلنگانہ میں کانگریس کی حکومت قائم ہوگی اور اندرون 100 یوم نظام شوگرفیاکٹری کااحیاء کیا جائے گا۔ ٹی آرایس کے ساڑھے چار سالہ دور حکومت میں کے سی آر نے نظام شوگر فیاکٹری کے احیاء کے لئے ایک روپیہ بھی جاری نہیں کیا۔ انہوںنے کے سی آر اوران کی دختر کویتا سے نظام آباد کے عوام سے معذرت خواہی کا مطالبہ کیااورکہاکہ ٹی آرایس کے دورحکومت میں 4500 کسان فوت ہوگئے لیکن کے سی آر نے ایک بھی کسان کے پسماندگان کو پر سہ نہیں دیا۔ کے سی آر نے بنگاروتلنگانہ بنانے کا وعدہ وفانہیں کیا لیکن اپنے ہی خاندان کو بنگاروخاندان بنادیا۔ کسانوں کے قرض معاف کرنے کا اعلان تو کیالیکن برسراقتدار آنے کے بعد اس وعدہ کو فراموش کردیا۔ مشن بھاگیرتا کے کنٹراکٹرس کو بلز کی ادائیگی کے لئے فنڈدستیاب ہے لیکن خودکشی کرچکے کسانوں کے ورثاء کوایکس گریشاء دینے کے لئے حکومت کے پاس فنڈچکے نہیںہیں۔ کے سی آر کی آمرانہ طرز حکمرانی سے ریاست جمہوریت ‘انسانی حقوق ‘آزادی صحافت کے اقدار کوپامال کیاگیا۔ پولیس طاقت کے ذریعہ حکمرانی کی جارہی ہے ۔ انسانی حقوق کے کارکن پروفیسر ہراگوپال کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمات درج کئے گئے ۔ اتم کمارریڈی نے جلسہ میں موجود ہزاروں کسانوں کوتیقن دیا کہ کانگریس برسراقتدار آنے پر اندرون ایک سال کسانوں کے 2لاکھ تک کے قرض یکمشت معاف کئے جائیں گے ۔ کسانوں کو زرعی پید اوارپر اقل ترین قیمت ادا کی جائے گی۔ متوفی کسانوں کو 5 لاکھ روپیہ کا ایکس گریشیاء دیا جائے گااور انہیں انشورنس کے ذریعہ علاج کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ طلباء ونوجوانوں کی قربانیوں سے متاثرہوکر سونیا گاندھی نے علحدہ تلنگانہ دیالیکن کے سی آر ایک لاکھ نوجوانوں کوملازمتیں فراہم کرنے میں ناکام ہوگئے ۔ کانگریس کے برسر اقتدار آنے کے اندرون ایک سال ایک لاکھ نوجوانوں کوروزگار فرہم کیاجائے گا۔ 10لاکھ بیروزگار نوجوانوں کوماہانہ 3ہزار روپیہ بھتہ دیا جائے گا ۔ کانگریس برسراقتدارآنے پر میگاڈی ایس سی منعقد کرتے ہوئے 20 ہزار اساتذہ کا تقرر کیاجائے گا۔ انہوںنے کہاکہ تلنگانہ کے تمام اضلاع میں کانگریس کے حق میں زبردست لہر چل رہی ہے ۔ نظام آباد کی تمام 9اسمبلی نشستوں پر کانگریس کا قبضہ ہوگا۔ بھوپتی ریڈی نے اپنی تقریر میں کہاکہ ٹی آرایس حکومت سے عوام کے تمام طبقات بدظن ہوچکے ہیں۔ کانگریس میں شمولیت کامقصد ریاست کوحقیقی پر بنگاروتلنگانہ میں تبدیل کرناہے ۔ سابق وزیر سدرشن ریڈی نے کہاکہ آئندہ انتخابات میں کانگریس کا برسر اقتدارآنایقینی ہے ۔ نظام آباد میں ہرطرف کانگریس کی لہرچل رہی ہے ۔ ابتداء میں صدر نظام آباد ڈسڑکٹ کانگریس کمیٹی طاہر بن ہمدان نے بھوپتی ریڈی اور ان کے حامیوں کاتعارف کروایا۔

جواب چھوڑیں