ذاکر نائک کی 4 جائیدادیں ضبط کرنے کا حکم

 این آئی اے کی خصوصی عدالت نے ممبئی میں مفرور اسلامی مبلغ ذاکر نائک کی 4 جائیدادیں ضبط کرنے کا حکم دیا ہے جن کے خلاف انسداد دہشت گردی قانون کے تحت کیس درج ہے۔ جون 2017 میں ذاکر نائک کو اشتہاری مجرم قراردیا گیا۔ نیشنل انوسٹیگیشن ایجنسی (این آئی اے ) نے 52 سالہ مبلغ کے 2 فلیٹ اور ایک کمرشیل جائیداد ممبئی میں ضبط کرلئے تھے۔ مچگاؤں میں مزید 4 جائیدادیں ضبط کرنے کی اجازت جمعرات کو خصوصی عدالت نے دے دی۔ این آئی اے کی طرف سے وکیل آنند سکھدیو نے عدالت سے کہا کہ ذاکر نائک کئی بیرونی ممالک کی شہریت لینے کی کوشش میں ہے۔ وہ اس کے مچگاؤں کی یہ جائیدادیں فروخت کرکے پیسہ جٹانے کی کوشش میں ہے۔ نومبر 2016 میں مرکزی حکومت نے ذاکر نائک کی اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن (ڈونگری‘ ممبئی) کو غیرقانونی تنظیم قراردیا تھا۔

جواب چھوڑیں