افغانستان میں الیکشن ریالی میں دھماکہ‘ 12ہلاک

افغانستان میں ایک امیدوار کے حامیوں کے درمیان دھماکو اشیا سے لدی موٹرسیکل ہفتہ کے دن پھٹ پڑی۔ کم ازکم 12 افراد ہلاک ہوئے۔ عہدیداروں نے یہ بات بتائی۔ سیاسی ریالی پر یہ تازہ حملہ ہے۔ پارلیمانی الیکشن سے قبل تشدد میں حالیہ مہینوں میں سینکڑوں افراد ہلاک یا زخمی ہوچکے ہیں۔ 20 اکتوبر کو رائے دہی سے قبل مزید عسکریت پسند حملوں کی توقع ہے۔ شمال مشرقی صوبہ تخار میں پارلیمانی امیدوار این یوسف بیگ کی انتخابی مہم میں دھماکہ میں مزید 32 افراد زخمی ہوئے۔ صوبائی گورنر کے ترجمان محمد جواد ہجری نے اے ایف پی کو یہ بات بتائی۔صوبائی پولیس کے ترجمان خلیل اسیر نے ہلاکتوں کی تعداد 13 بتائی ہے۔ این یوسف بیگ کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں۔ اسیر نے اے ایف پی کو بتایا کہ موٹرسیکل میں رکھا گیا بم خاتون امیدوار کے حامیوں کے درمیان پھٹ پڑا۔ خان جان نے اے ایف پی کو بتایا کہ طاقتور دھماکہ میں کئی لوگ ہلاک ہوئے۔ 2500 سے زائد امیدوار الیکشن لڑرہے ہیں۔ طالبان نے امیدواروں کو خبردار کیا ہے کہ وہ بوگس الیکشن سے ہٹ جائیں۔ طالبان نے الیکشن کو امریکی سازش قراردیا ہے۔

جواب چھوڑیں