انتخابات میں کانگریس کا صفایا یقینی۔وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی کی پیش قیاسی

کارگذار وزیرداخلہ این نرسمہا ریڈی نے کہا کہ اسمبلی انتخابات میں تلنگانہ عوام کانگریس کو سبق سکھائیں گے۔ سابق میں کانگریس نے اپنے 10 سالہ دور اقتدار میں تلنگانہ کو نظر انداز کردیا۔ اس لئے عوام نے گذشتہ انتخابات میں کانگریس کو مسترد کردیا تھا ۔ اب ایک بار پھر عوام، دسمبر میں منعقدشدنی انتخابات میں بھی کانگریس کو ووٹ نہ دے کر اس پارٹی کا سیاسی خاتمہ کردیں گے ۔ این نرسمہا ریڈی نے آج ٹی آر ایس لیجسلیچرس پارٹی دفتر میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس ، اسمبلی انتخابات میں تنہا حصہ لینے کے بجائے تلگودیشم پارٹی اور دیگر سیاسی جماعتوں کے ساتھ مفاہمت کررہی ہے ۔ ٹی آر ایس کو عوام دوست پارٹی قرار دیتے ہوئے انہوںنے کہا کہ اس پارٹی کا کیڈر دیگر سیاسی جماعتوں کے بہ نسبت بہت زیادہ مضبوط اور فعال ہے۔ تلگودیشم پارٹی کے قومی صدر و چیف منسٹر اے پی این چندرا بابو نائیڈو نے تلنگانہ کے آبپاشی پراجکٹس کے تعمیری کام رکوانے کیلئے مرکزی حکومت کو کئی مکتوب روانہ کئے تھے ۔ صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی ، مخالف تلنگانہ، تلگودیشم پارٹی سے انتخابی مفاہمت کررہے ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ ایک ایڈوکیٹ نے ریونت ریڈی کے غیر قانونی اثاثہ جات سے متعلق محکمہ انکم ٹیکس سے شکایت کی تھی جس کے با عث محکمہ انکم ٹیکس کے عہدیداروں نے ریونت ریڈی کے مکانات اور ان کے دیگر مقامات پر دھاوے کئے تھے۔ اس واقعہ سے ٹی آر ایس کا کوئی تعلق نہیں ہے ۔ انہوںنے کہا کہ حلقہ اسمبلی کوڑنگل کے عوام، انتخابات میں ریونت ریڈی کو ووٹ نہ دے کر انہیں سبق سکھائیں گے ۔انہوںنے کہا کہ اسمبلی انتخابات میں ٹی آر ایس کو 100 حلقوں سے کامیابی ملے گی ۔

جواب چھوڑیں