چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ کے دفتر کے سامنے نماز پڑھنے والا گرفتار

وی وی آئی پی ایریا کی سیکوریٹی میں غفلت برتنے پر شرمندگی کا سامنا کرنے کے بعد اترپردیش پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کرلیا جس نے چاقو کے ساتھ چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ کے دفتر کے سامنے سڑک کے بیچ میں نماز ادا کی تھی۔ جمعہ کے دن اس واقعہ کے وقت چیف منسٹر اپنے دفتر میں ایک میٹنگ میں تھے۔ سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) کلاندھی نیتھانی نے لکھنو میں ہفتہ کے دن 2 ملازمین پولیس کو معطل کردیا۔ ملزم رفیق احمد کو جو لکھنو کے عیش باغ کا رہنے والا ہے‘ کل رات دیر گئے گرفتار کرلیا گیا۔ ذرائع نے بتایا کہ جمعہ کی رات لگ بھگ 7:45 بجے ایک شخص نے سڑک کے بیچ میں نماز ادا کی اور حکومت کے خلاف نعرے لگائے۔ وہاں موجود پولیس والوں نے اس پر کوئی توجہ نہیں دی۔ تقریباً 30منٹ گڑبڑ کرکے یہ شخص اپنی اسکوٹی پر وہاں سے چلاگیا۔ سوشل میڈیا پر واقعہ اَپ لوڈ ہونے اور وی وی آئی پی ایریا کے قریب سیکوریٹی پر سوال اٹھنے پر مقامی حکام نے واقعہ کا نوٹ لیا۔ پولیس نے بتایا کہ ملزم سے پوچھ تاچھ جاری ہے اور اسے جیل بھیج دیا جائے گا۔ لکھنو کے گومتی نگر علاقہ میں حال میں ایک کانسٹیبل نے ایپل کمپنی کے اکزیکٹیو کو اس کے بقول چیکنگ کے لئے گاڑی نہ روکنے پر گولی مارکر ہلاک کردیا تھا۔ حکومت نے اس واقعہ کا سخت نوٹ لیا تھا۔ اس نے 2 کانسٹیبلوں کو ملازمت سے برخواست کرکے جیل بھیج دیا۔ یوگی حکومت سخت تنقید کا نشانہ بنی تھی۔

جواب چھوڑیں