جسونت سنگھ کا لڑکا کانگریس میں شامل

بی جے پی کے سابق مرکزی وزیر جسونت سنگھ کا لڑکا منویندرسنگھ اور مہاراشٹرا کے سابق بی جے پی رکن اسمبلی آشیش دیشمکھ چہارشنبہ کے دن کانگریس میں شامل ہوگئے۔ حلقہ شیور(باڑھ میر) کے رکن اسمبلی منویندرسنگھ نے ستمبر میں بی جے پی چھوڑی تھی جبکہ دیشمکھ نے رافیل معاملت پر بطوراحتجاج جاریہ ماہ اسمبلی کی رکنیت سے استعفیٰ دے دیاتھا۔ دونوں کو کانگریس صدر راہول گاندھی اور جنرل سکریٹری اشوک گہلوت کی موجودگی میں پارٹی میں شامل کیاگیا۔ بعدازاں میڈیا سے بات چیت میں منویندرسنگھ نے کہا کہ وہ کانگریس میں اس لئے شامل ہوئے ہیں کہ راجستھان کی وسندھراراجے حکومت انہیں مسلسل نشانہ بنارہی تھی۔ مسئلہ 2014ء میں اس وقت شروع ہوا تھا جب ان کے والد جسونت سنگھ کو لوک سبھا الیکشن کے لئے بی جے پی ٹکٹ نہیں دیاگیا۔ اشوک گہلوت نے کہا کہ جسونت سنگھ جیسے شخص کو جو ملک کا وزیرفینانس، وزیر دفاع اور وزیرخارجہ رہا جو وزیراعظم بننے کا اہل تھا ایک سازش کے تحت بی جے پی میں منظم طریقہ سے نشانہ بنایاگیا۔ راہول گاندھی نے سوشل میڈیا پر منویندرسنگھ کی کانگریس میں شمولیت کا اعلان کیا اور کہا کہ اس سے پارٹی کی طاقت بڑھی ہے۔

جواب چھوڑیں