کانگریس 21؍ اکتوبر تک نشستوں کی ساجھے داری کو قطعیت دیدے : سی پی آئی

کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا نے تلنگانہ میں منعقد ہونے والے اسمبلی انتخابات کیلئے کانگریس پر زور دیا ہے کہ وہ21 ؍ اکتوبر تک نشستوں کی ساجھے داری مسئلہ کو قطعیت دے ۔ اس نے تنہا مقابلہ کرنے کا بھی عندیہ دیا ہے ۔ چند ہفتے قبل119رکنی اسمبلی سے انتخابات جو7 دسمبر کو منعقد ہونے والے ہیں ان انتخابات کیلئے کانگریس ، ٹی ڈی پی ، سی پی آئی اور تلنگانہ جنا سمیتی ( ٹی جے ایس ) نے اصولی طور پر انتخابی اتحاد کا اعلان کیا تھا ۔ چار اہم باتوں میں نشستوں کی ساجھے داری کے مسئلہ پر بات چیت جاری رہی ہے ۔ کانگریس ذرائع نے کہا نشستوں کی تقسیم حلقوں میں امکانی کامیابی کے عنصر پر مبنی ہوگی۔ سی پی آئی اور بالخصوص ٹی جے ایس قائدین نے مسئلہ میں تاخیر پر اپنی ناگواری کو مخفی نہیں رکھا ہے ۔ کانگریس کے ذرائع نے کہا کہ ٹی ڈی پی، سی پی آئی اور ٹی جے ایس ، ان کے شفاف حصہ کے مقابلہ میں مزید نشستوں کا مطالبہ کررہی ہیں پی ٹی آئی سے بات کرتے ہوئے سی پی آئی کے قومی معتمد عمومی سوراورم سدھا کر ریڈی نے کہا ہم دائمی طور پر (نشستوں کی ساجھے داری کو قطعیت دینے ) تو ان کا انتظار نہیں کرسکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا21 اکتوبر کو ہماری ریاستی پارٹی عاملہ کا اجلاس ہوگا ۔ ہم اس میں یہ فیصلہ کریں گے کہ آیا ہمیں اتحاد کے ساتھ جانا چاہئے یا ہمیں تنہا مقابلہ کرنے کے لئے اپنے راستہ کا فیصلہ کرنا چاہئے ۔ جوکچھ کیا جانے والا ہے ہم اس پر تبادلہ خیال کریں گے۔ سی پی آئی پہلے ہی کانگریس کو 12نشستوں جہاں سے وہ مقابلہ کرنا چاہتی ہے ، کی فہرست دے دی ہیں۔ ان میں9 حلقوں سے لیفٹ پارٹی کو گہری دلچسپی ہے ۔ ریڈی نے کہاہم بات چیت کیلئے تیار ہیں چاہے ایک یا دونشستیں کم کیوں نہ ہوجائیں ہم سات آٹھ نشستوں کے مسئلہ کو سلجھا نے کیلئے تیار ہیں۔ ردعمل پوچھے جانے پر اے آئی سی سی انچارج تلنگانہ آر سی کنتیا نے اس دھمکی کی اہمیت پر توجہ نہیں دی انہوںنے بتایا وہ کل شب سی پی آئی کے سینئر قائد ڈی راجہ کے ساتھ نشستوں کی ساجھے داری کے مسئلہ پر طویل گفتگو کرچکے ہیں۔ بات چیت ( ٹی ڈی پی ، سی پی آئی اور ٹی جے ایس کے ساتھ) جاری ہے ۔ ہم جلد ہی نشستوں کے لئے ساجھے داری بات چیت کو قطعیت دیں گے ۔ پچھلے اتوار کو سی پی آئی نے کہا تھا کہ اس نے آئندہ ماہ چھتیس گڑھ اسمبلی انتخابات کیلئے اجیت جوگی کی جنتا کانگریس چھتیس گڑھ ( جے ) کے ساتھ اتحاد کیا ہے۔

جواب چھوڑیں