حماس کو غزہ سرحدی تشدد کچلنے کی توقع: فلسطین

حماس کو یہ توقع ہے کہ گذشتہ ہفتہ مظاہرہ کے دوران جو تشدد پھوٹ پڑا تھا اس کی شدت میں کمی لائی جاسکتی ہے۔ فلسطینی ذرائع کے بموجب سرکاری طورپر واپسی کی اپیل کے باوجود مہم کی آرگنائزنگ کمیٹی ہفتہ وار غزہ سرحدی تشدد میں شرکت کی۔ ذرائع نے مزید کہا مصری انٹیلیجنس سربراہوں سے بات چیت کی گئی ہے اور اسرائیلی وارننگ کو بھی مد نظر رکھا گیا ہے کہ مزید غزہ پٹی میں شدت سے غزہ میں فوجی مہم کا آغاز کیا جاسکتا ہے جس سے دہشت گرد تنظیم کو بھی تشدد کو کچلنے کیلئے آگے آنا پڑے گا۔ نیٹ نیوز نے یہ اطلاع دی۔ حماس کی زیر قیادت آرگنائزنگ کمیٹی نے ایک ویڈیو تشدد کے تعلق سے جاری کیا ہے جس کے ساتھ ہی 30ویں ہفتہ سے چلے آرہے مارچ آف ریٹرن مہم کا آغاز ایک نعرہ کے ساتھ شروع ہوا تھا۔ ویڈیو میں اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ فلسطینی‘ جمعہ کے تشدد سے دور ہورہے ہیں۔ اسرائیلی فیصلہ ساز یقینی کرتے ہیں کہ جھڑپوں کو سرحد کی باڑ کے قریب ختم کرنا اور سکون بحال کرنا ضروری ہے۔

جواب چھوڑیں