سعودی عرب کیخلاف منظم مہم۔جمال خشوگی کے لاپتہ ہوجانے پر جھوٹے الزامات:امام کعبہ شریف

امام کعبہ شریف نے ناراض صحیفہ نگار کے لاپتہ ہوجانے کے زائد از دو ہفتہ بعد سفارتی بحران پیدا ہوجانے کے باعث سعودی عرب کے خلاف جھوٹے الزامات کا سامنا کرنے کیلئے اتحاد کی ضرورت ظاہر کی۔ جمال خشوگی کے 2 اکتوبر کو استنبول میں واقع سعودی عرب کے قونصل خانہ میں داخل ہونے کے بعد لاپتہ ہوجانے کے بعد سے ریاض پر بین الاقوامی دبائو بڑھتا جارہا ہے۔ موافق حکومت ترک ذرائع ابلاغ نے اطلاع دی ہے کہ سعودی ہٹ اسکواڈ کی جانب سے ان کو اذیتی پہنچائی گئیں اور ان کے جسم کے ٹکڑے کردیئے گئے۔ یہ وہ دعوے ہیں جن کو ریاض نے مسترد کردیا ہے۔ شیخ عبدالرحمن السدیس نے حرم شریف میں نماز جمعہ کے بعد خطبہ کے دوران کہا ’’باربار الزام تراشی، الزامات اور جانب داری پر مبنی ذرائع ابلاغ کی مہم سے سعودی عرب کی اس کے اصولوں پر چلنے کے سلسلہ میں حوصلہ شکنی نہیں ہوگی اور اس کا حوصلہ بلند رہے گا‘‘۔ انہوں نے وضاحت کی سلطنت جھوٹے الزامات سے نمٹنے کیلئے صرف اللہ رب العزت پر انحصار کرتی ہے اور اس کے بعد اپنے سپوتوں کے اتحاد پر زور دیتی ہے‘‘۔ انہوں نے سعودی شہریوں پر زور دیا کہ وہ ’’حقائق پر انحصار کریں اور قیاس آرائیاں کرنے اور جھوٹے الزامات کی بنیاد پرکوئی نتیجہ اخذ کرنے سے گریز کریں‘‘۔ انہوں نے وضاحت کی کہ سلطنت کے خلاف مہم اس لئے چلائی جارہی ہے تاکہ ساری دنیا کے زائد از ایک عرب مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی جاسکے اور انہیں مشتعل کیا جاسکے۔

جواب چھوڑیں