نظر ثانی ووٹرلسٹ کی نقولات سیاسی جماعتوں کے حوالے کی جائیں۔کلکٹرس کو سی ای او ‘رجت کمار کی ہدایت

چیف الیکٹورل آفیسر تلنگانہ ڈاکٹر رجت کمار نے تمام ضلع کلکٹرس کو ہدایت دی ہے کہ وہ25؍ اکتوبر کو نظر ثانی فہرست رائے دہندگان کی نقولات، سیاسی جماعتوں کے حوالے کریں۔ جی ایچ ایم سی آفس میں ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ ریاست کے تمام ضلع کلکٹرس اور ایس پیز سے بات چیت کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ پختہ عمارتوں میں ہی مراکز رائے دہی کا قیام عمل میں لایا جانا چاہئے ۔ تمام پولنگ بوتھس میں پانی، برقی، بیت الخلائ، کرسیوں کا نظم جیسے سہولتیں ہونی چاہئے تاکہ ان سہولتوں سے رائے دہندے استفادہ کرسکیں۔ اگر کسی عمارت میں ان سہولتوں کا فقدان پایا جاتا ہے تو فوری طور پر دوسری عمات میں بوتھ قائم کریں ۔ انہوں نے کلکٹرس اور ایس پیز پر زور دیا کہ وہ رائے دہی کے تناسب میں اضافہ کیلئے ممکنہ مساعی انجام دیں۔ تلنگانہ سے5ریاستوں آندھرا پردیش ، کرناٹک، مہاراشٹرا، چھتیس گڑھ اور اڈیشہ کی سرحد یں ملتی ہیں۔ سرحدی اضلاع میں خصوصی چیک پوسٹس قائم کرتے ہوئے شراب، دولت کی غیر مجاز منتقلی کو روکنے اور دیگر غیر قانونی سرگرمیوں کو روکنے کیلئے سخت اقدامات کریں ۔ شراب اور پیسہ کے غیر مجاز استعمال سے رائے دہندوں کو لبھایا جاسکتا ہے ۔ اس لئے پیسہ اور شراب کی غیر مجاز منتقلی کو روکنے کیلئے سخت سے سخت قدم اٹھائیں۔ ہر ایک گاڑی کی تلاشی لیں۔ تلاشی کے بغیر کسی بھی گاڑی کو آگے جانے نہ دیں ۔ انہوں نے بتایا کہ سابق ضلع عادل آباد میں91مقامات کی حساس مقامات کی حیثیت سے شناخت کی گئی ہے ۔ ان حساس مقامات پر پیشگی صیانتی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوںنے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین اور وی وی پی اے ٹی مشینوں کی کارکردگی سے متعلق عوام میں پائی جانے والے شکوک وشبہات کا ازالہ کرنا ضروری ہے ۔ اگر ان مشینوں میں واقعی کوئی نقص پایا جائے تو ان مشینوں کو الیکشن کمیشن کے پاس روانہ کردینا چاہئے ۔

جواب چھوڑیں