پاکستانی فاسٹ بولرمحمد عباس کا منفردریکارڈ

پاکستان کے نوجوان فاسٹ بولر محمد عباس نے ٹسٹ کرکٹ میں تاریخ رقم کردی اور وہ گزشتہ سال کے دوران ٹسٹ کرکٹ میں بہترین اوسط کے حامل بولر بن گئے ہیں۔ آسٹریلیا کے خلاف سیریز میں محمد عباس نے عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ناصرف ٹسٹ کرکٹ میں اپنی 50 وکٹیں مکمل کیں بلکہ سیریز میں مجموعی طورپر 17 وکٹیں حاصل کیں۔ تاہم اس سب سے بڑھ کر محمد عباس نے اپنی شاندار بولنگ اوسط کی بدولت دنیا بھر کے بڑے بڑے بولرس کو پیچھے چھوڑ دیا اور وہ موجودہ صدی کے ساتھ ساتھ 20 ویں صدی میں بھی کم ازکم 50 وکٹیں لینے والے بولرس میں بہترین اوسط کے حامل گیند باز بن گئے ہیں۔ اس وقت عباس نے ٹسٹ کرکٹ میں 15.64 کی اوسط سے 59 وکٹیں حاصل کی ہیں اور وہ مجموعی طورپر انٹرنیشنل کرکٹ میں بہترین اوسط کے حامل کھلاڑیوں میں چوتھے نمبر پر موجود ہیں۔ انگلش بولر جیورج لومین 10.75 کی اوسط کے ساتھ سرفہرست ہیں جبکہ آسٹریلیا کے جے جے فیرس کی اوسط 12.70 اور انگلینڈ کے بلی بارنس 15.54 کی اوسط کے ستھ تیسرے نمبر پر ہیں لیکن ان تینوں کھلاڑیوں نے 19 ویں صدی میں کرکٹ کھیلی تھی۔ اس فہرست میں چوتھے نمبر پر عباس ہیں جبکہ 16.42 کی اوسط کے ساتھ پانچویں نمبر پر موجود بلی بیٹس نے بھی 19 ویں صدر میں ہی کرکٹ کھیلی تھی۔ چھٹے نمبر پر موجود عظیم انگش فاسٹ بولر سڈنی بارنس نے 20 ویں صدی میں کرکٹ کھیلی اور ان کی اوسط 16.43 ہے۔ 21 ویں صدی میں کھیلنے والے فاسٹ بولرس میں عباس کے بعد سب سے بہترین بولنگ اوسط جنوبی افریقہ کے ورنان فلینڈر کی ہے جو 55 ٹسٹ میاچس میں 21.54 کی اوسط سے 205 وکٹیں لے چکے ہیں۔ عباس نے آسٹریلیا کے خلاف دوسرے ٹسٹ میچ میں 10 وکٹیں لیں اور اس طرح وہ آسٹریلیا کے خلاف ٹسٹ میچ میں 10 وکٹیں لینے والے پانچویں فاسٹ بولر بن گئے۔ سب سے پہلے فضل محمود نے یہ کارنامہ انجام دیا جس کے بعد عمران خان، سرفراز نواز اور پھر 1990 میں وسیم اکرم نے بھی میچ میں 10 وکٹیں لی تھیں۔ اس کے ساتھ ساتھ عباس آسٹریلیا کے خلاف کم ترین رنز دیکر میچ میں 10 وکٹیں لیے والے دوسرے فاسٹ بولر بن گئے ہیں۔

جواب چھوڑیں