سبھاش چندربوس کے ویژن کے مطابق فوج کی جدید کاری۔ لال قلعہ میں وزیراعظم کا خطاب

وزیراعظم نریندرمودی نے اتوار کے دن طویل تقریر میں جدوجہد آزادی میں آزاد ہند فوج کی خدمات کا ذکرکرتے ہوئے کہا کہ ان کی حکومت بڑے اور جراتمندانہ فیصلوں کی پابند ہے اور ہندوستانی فوج کو نیتاجی سبھاش چندربوس کے ویژن کے مطابق جدید بنایاجارہا ہے۔ پروٹوکول سے ہٹ کر لال قلعہ میں آج پرچم کشائی کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آزادی کے 70برس بعدبھی نیتاجی کے خواب پورے نہیں ہوئے۔ آزاد ہند سرکار کی قیام کے 75 سال مکمل ہونے پر لال قلعہ میں یہ تقریب منعقد ہوئی۔ انہوں نے ماناکہ ہندوستان نے آزادی کے بعد سے کافی ترقی کی ہے لیکن اسے عظمت کی نئی بلندیوں پرپہنچنا باقی ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیاکہ این ڈی اے حکومت نئے ہندوستان کے ویژن کے ساتھ آگے بڑھتے ہوئے یہ نشانہ پورا کرنے کی پابند ہے۔ انہوں نے کہا کہ تفرقہ پسند طاقتیں ہمیں نشانہ بنارہی ہیں۔ نئے انڈیا کا ویژن نیتاجی کے تصور کے عین مطابق ہے۔ وزیراعظم نے پچھلی حکومتوں کو موردالزام ٹہرایا کہ انہوں نے ملک کو انگریزی تناظر میں دیکھا۔ ہماری حکومت اسے بدل رہی ہے۔ انہوں نے زوردے کرکہا کہ نیتاجی کے ویژن میں ملک کا اقتداراعلیٰ ایک اہم پہلو تھا۔ مودی نے کہا کہ آج میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ ہندوستان نیتاجی کے ویژن کے مطابق فوج بنانے کی سمت بڑھ رہا ہے۔ جنون اور جذبہ ہماری فوج کیلئے عرصہ سے اہم رہے ہیں لیکن اس کے ساتھ اب ٹکنیک اور جدید ہتھیاروں اور آلات کو بھی جوڑدیاگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوج کی طاقت اپنی حفاظت کیلئے ہوتی ہے اور مستقبل میں بھی ایسا ہی رہے گا۔ہندوستان کبھی بھی ایسا لالچی نہیں رہا کہ کسی دوسرے کی زمین پر نظرڈالے۔ یہ ہماری تاریخ رہی ہے لیکن جس کسی نے بھی ہندوستانی اقتدارِ اعلیٰ کے لئے خطرہ پیدا کیا اسے دگنی طاقت سے کراراجواب دیاگیا۔ روایت رہی ہے کہ وزیراعظم سال میں صرف ایک بار 15اگست کو لال قلعہ میں ترنگالہراتے ہیں لیکن مودی نے آج پہلی مرتبہ یہ روایت توڑی کیونکہ انگریزوں نے نیتاجی کی آزاد ہند فوج کے عہدیداروں کے خلاف لال قلعہ میں ہی مقدمہ چلایاتھا۔ پی ٹی آئی کے بموجب وزیراعظم نے کہا کہ ہندوستان کبھی کسی دوسرے کے علاقہ پر نظرنہیں ڈالتا لیکن اس کے اقتدارِ اعلیٰ کو چیالنج کیاگیاتو وہ دگنی طاقت سے اس کا جواب دے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایسی فوج بنانے کی سمت بڑھ رہے ہیں جس کا ویژن نیتاجی سبھاش چندربوس رکھتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت نے سرحد پار سرجیکل اسٹرائک جیسے فیصلے کئے۔ نیتاجی سبھاش چندربوس کے ایک قریبی ساتھی نے وزیراعظم نریندرمودی کو آزاد ہند فوج کی ٹوپی پیش کی۔

جواب چھوڑیں