ہندوستان نے پہلے ونڈے میں ویسٹ انڈیز کو8وکٹ سے ہرادیا

کپتان ویراٹ کوہلی140 اور نائب کپتان روہت شرما ناٹ آؤٹ 152 کی زبردست سنچریوں اور ان کے درمیان دوسرے وکٹ کے لئے 246رنوں کی ریکارڈ پارٹنرشپ کی بدولت ہندوستان نے ویسٹ انڈیز کے 322کے اسکور کو بونا ثابت کرتے ہوئے اتوار کو پہلا ونڈے آٹھ وکٹ سے جیت کر پانچ میاچوں کی سیریز میں 0۔1سے برتری حاصل کرلی۔ ویسٹ انڈیز نے شمرون ہتمایر 106کی زبردست اننگز کی بدولت 50اوور میں آٹھ وکٹ پر 322رن کا مضبوط اسکور بنایا لیکن دونوں ہندوستانی بلے بازوں نے جیسی بلے بازی کی اس سے اس پچ پر 400کا اسکور بھی کم پڑجاتا۔ ہندوستان نے42.1 اوورس میں دو وکٹ پر 326رن بنا کر یکطرفہ جیت حاصل کرلی۔ ہندوستانی کپتان نے اپنا 36ویں اور نائب کپتان نے 20ویں سنچری بنائی۔ دونوں بلے بازوں نے چوکے مار کر اپنی سنچری مکمل کی۔ ویراٹ نے107گیندوں پر 140رن میں 21 چوکے اور دو چھکے لگائے ۔ روہت نے 117گیندوں پر 15 چوکوں اور آٹھ چھکوں کی مدد سے ناٹ آؤٹ 152ن بنائے ۔ روہت نے ہندوستان کی فتح کابھی چھکا لگایا۔قبل ازیں شمرون ہتمائر 106کی طوفانی سنچری سے ویسٹ انڈیز نے ہندوستان کے خلاف50 اوور میں آٹھ وکٹ پر 322 رن کا مضبوط اسکور بنایا ۔ ہندوستانی کپتان ویراٹ کوہلی نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔ یہ فیصلہ اس وقت تک ٹھیک لگ رہا تھا جب ہندوستان نے ویسٹ انڈیز کے چار بلے باز 22ویں اوور تک 114کے اسکور پر پویلین لوٹا دیئے تھے ۔ لیکن اس کے بعد ہتمائر ہندوستانی گیند بازوں پر قہر بن کر ٹوٹ پڑے اور انہوں نے محض 78 گیندوں پر چھ چوکے اور چھ چھکے لگاتے ہوئے 106 رن بنا ڈالے ۔ہتمائر کی یہ تیسری ونڈے سنچری تھی۔ ہندوستانی فاسٹ بولر محمد سمیع نے ٹاپ آرڈر میں دو وکٹ حاصل کئے لیکن اس کے بعد وہ مہنگے ثابت ہوئے ۔ سمیع نے 10 اوور میں 81 رن دے کر دو وکٹ لئے ۔ لیگ اسپنر یجویندر چہل نے 41 رن پر تین وکٹ، جڈیجہ نے 66 رن پر دو وکٹ اور خلیل احمد نے 64 رن پر ایک وکٹ لیا۔ اومیش یادو 64 رن دے کر کوئی وکٹ حاصل نہیں کر سکے ۔کوہلی کو ان کی طوفانی سنچری کی بدولت میان آف دی میاچ کا حقدار تسلیم کیاگیا۔دونوں ٹیموں کے درمیان دوسرا ونڈے چہارشنبہ کو وشاکھا پٹنم کے ڈاکٹر وائی ایس راج شیکھر ریڈی اسٹیڈیم میںکھیلا جائے گا۔

جواب چھوڑیں