عظیم اتحاد کے بکھرنے کا قوی امکان

ریاست میں کانگریس کی زیر قیادت عظیم اتحاد کی تشکیل سے متعلق اپوزیشن جماعتوں کا خواب‘ خواب رہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ تشکیل سے قبل اس کے بکھرنے کے امکانات ہیں۔ نشستوں کی تقسیم کے مسئلہ پر بات چیت نتیجہ ثابت خیز نہ ہونے کے سبب پروفیسر کودنڈارام کی جماعت تلنگانہ جنا سمیتی نے اتحاد سے دوری اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ سی پی آئی‘ مہاکوٹمی (عظیم اتحاد) کا حصہ نہ بننے کا فیصلہ کرچکی ہے۔ سی پی آئی اور ٹی جے ایس کے قائدین کا کہنا ہے کہ نشستوں کی تقسیم اور تعداد‘ ہمارے لئے کوئی مسئلہ نہیں ہے مگر کانگریس کا رویہ‘ ہمارے لئے پریشانی کا سبب بنا ہوا ہے۔ ہمارے قائدین کی توہین کی جارہی ہے۔ ٹی جے ایس‘ 16اور سی پی آئی 10 نشستوں کا مطالبہ کر رہی ہے۔ دوسری طرف کانگریس‘ ٹی ڈی پی کے ساتھ مفاہمت کرتے ہوئے ان دونوں جماعتوں کو نظر انداز کرنے کی پالیسی بنائی ہے۔

جواب چھوڑیں