بی جے پی‘ ملک کو معاشی تباہی کے راستہ پر لے جارہی ہے:پی چدمبرم

سینئر کانگریس قائد اور رکن راجیہ سبھا پی چدمبرم نے آج مرکز کی بی جے پی زیرقیادت این ڈی اے حکومت پر سخت تنقید کی اور الزام عائد کیا کہ وہ ملک کو ٹکراؤ اور معاشی تباہی کے راستہ پر لے جارہی ہے ۔گوہاٹی میں پریس کانفرنس سے خطاب میں چدمبرم نے کہا کہ میعاد ختم ہونے کو ہے‘ ایسے میں بی جے پی نے پھر سے ہندوتوا ایجنڈہ لادا ہے۔ وزیراعظم اور چیف منسٹروں سے لے کر پارٹی کارکنوں اور پرچارکوں تک سب نے ہندوتوا کو اپنایا ہے۔ تفرقہ پسند ‘ متنازعہ اور مذہبی بنیادوں پر صف بندی کرنے والے ہندوتوا کو پھر سے لایا گیا ہے۔ چدمبرم نے کہا کہ ہمیں فی الحال تشویش اس بات کی ہے کہ بی جے پی حکومت ‘ ملک کے اہم اداروں پر قبضہ کرنا چاہتی ہے۔ تازہ شکار‘ ریزرو بینک آف انڈیا بنا ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ بی جے پی کو آر بی آئی کے رول کی کوئی سمجھ نہیں۔ حکومت کا فوری نشانہ یہ ہے کہ آر بی آئی کے کم ازکم 1 لاکھ کروڑ روپے مالی خسارہ پورا کرنے اور الیکشن کے سال اخراجات کے لئے لے لئے جائیں۔ اس سے بہت بڑی تباہی آئے گی۔ سابق مرکزی وزیر نے یہ بھی الزام عائد کیا کہ بی جے پی نے اپنے انتخابی وعدے پورے کرنے میں ناکام رہی۔ پارٹی ایسے وعدے کرکے برسراقتدار آئی جنہیں پورا کرنے کا اس کا کبھی کوئی ارادہ تھا ہی نہیں۔ کانگریس نے بی جے پی کی پرزور مخالفت اس لئے نہیں کہ وہ سیاسی حریف جماعت ہے بلکہ بی جے پی کا ویژن اکثریت کی حکمرانی‘ امتیاز برتنا اور ظلم ڈھانا ہے۔

جواب چھوڑیں