بی جے پی نے نکسل ازم سے سختی کے ساتھ نمٹا: یوگی آدتیہ ناتھ

رام مندر مسئلہ چھیڑتے ہوئے چیف منسٹر اترپردیش یوگی آدتیہ ناتھ نے ہفتہ کے دن جاننا چاہا کہ آیا کانگریس کو بھگوان رام کی فکر ہے یا مغل شہنشاہ بابر کی۔ چھتیس گڑھ میں انتخابی ریالی سے خطاب میں انہوں نے الزام عائد کیا کہ کانگریس نے قومی سلامتی سے کھلواڑ کیا۔ اس نے کھلے عام اور ڈھکے چھپے چھتیس گڑھ اور جھارکھنڈ میں نکسل ازم کی تائید کی تاکہ سیاسی فائدہ اٹھاسکے۔ معدنی ذخائر اور جنگلات کے باوجود چھتیس گڑھ‘ کانگریس دور میں غریب اور پسماندہ رہی۔ یوگی نے کہا کہ کانگریس نے اپنے فائدہ کے لئے نکسل ازم کو بڑھاوا دیا لیکن جب نکسل ازم عوام کی سلامتی کے لئے خطرہ بن گیا تو یہ بی جے پی ہی تھی جس نے سختی سے اس سے نمٹا۔ کانگریس کھلے عام اور ڈھکے چھپے نکسل ازم کی حوصلہ افزائی کرتی رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج ایسا کوئی دن نہیں گذرتا جب کشمیر میں سیکوریٹی فورسس کے ہاتھوں دو تین دہشت گرد نہ مارے جاتے ہوں یا سیکوریٹی فورسس کے سامنے ہتھیار نہ ڈالتے ہوں۔ چیف منسٹر یوپی نے کہا کہ کانگریس سے پوچھا جانا چاہئے کہ اس کا رشتہ بھگوان رام سے ہے یا بیرونی حملہ آور بابر سے۔ کانگریس کو ملک کے احترام اور عزت نفس کا کوئی خیال نہیں۔

جواب چھوڑیں