بی جے پی پہلے اپنے مسلم وزیروں کا نام تبدیل کرے:راج بھر

 اتر پردیش کے وزیر اوم پرکاش راج بھر نے شہروں کے ناموں کی تبدیلی کے جنون پر آج خوداپنی سیاسی حلیف بی جے پی کو شدید تنقید کانشانہ بنایا اور بی جے پی سے خواہش کی کہ وہ مختلف ٹاونس کے نام بدلنے سے پہلے خود اپنے مسلم قائدین کے نام بدل دے ۔ مسٹر راج بھر نے جو سہل دیو بھارتیہ سماج پارٹی ( ایس بی ایس ایس پی) کے صدر ہیں کہا کہ ’’ بی جے پی نے مغل سرائے اور فیض آباد کے نام بدل دیئے‘کیونکہ بی جے پی قائدین ان شہروں کے ناموں کو مغلوں سے منسوب سمجھتے تھے ۔ بی جے پی کے قومی ترجمان شاہنواز حسین ‘ مختار عباس نقوی( مرکزی وزیر ) اور محسن رضا ( یوپی کے وزیر ہیں )بی جے پی میں یہ تین مسلم چہرے ہیں ۔ بی جے پی قائدین کو چاہئے کہ وہ پہلے ان لوگوں کے نام تبدیل کردیں ‘‘۔ مسٹر راج بھر نے کہاکہ مذکورہ شہروں کے نام محض اس لیے تبدیل کئے گئے ہیں کہ پسماندہ اور بچھڑے ہوئے عوام کی توجہ ان سے متعلقہ مسائل سے ہٹائی جائے ۔ ’’ انہوں نے کہاکہ یہ سب ایک ڈرامہ ہے ۔ یہ جب کبھی پسماندہ اور بچھڑے ہوئے طبقات اپنے حقوق کے لیے آواز بلند کرتے ہیںان کی توجہ ہٹائی جاتی ہے ۔ مسٹر راج بھر نے کہاکہ کسی اور نے اتنی چیزیں نہیں دیں جتنی مسلمانوں نے دی ہیں ۔ انہوں نے پوچھا کہ کیا ہم جی ٹی روڈ کو بھی پھینک دیں ؟ لال قلعہ کس نے تعمیر کیا ؟ تاج محل کس نے تعمیر کیا؟

جواب چھوڑیں