ٹکٹ کیلئے کانگریس کارکنوں کا گاندھی بھون پر دھرنا

کانگریس ٹکٹ سے محرومی کے خدشات سے ناراض ہوکر اسمبلی حلقہ اپل اور نکریکل کے سینکروں کارکنوں نے اپنے پسند یدہ امیدواروں کو ٹکٹ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے گاندھی بھون میں احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ خانہ پور اسمبلی حلقہ کے کارکنوں کی کثیر تعداد اپنے پسندیدہ امیدوار اجمیرا ہرنائیک کو ٹکٹ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے دو دن سے گاندھی بھون میں بھوک ہڑتال کررہی ہے ۔ اسمبلی حلقہ اپل جو عظیم اتحاد میں شامل جماعت تلگودیشم کے حصہ میں آنے کا خدشہ ہے۔ اس حلقہ کے کانگریس ٹکٹ کے دعویدار آرلکشما ریڈی آج سہ پہر اپنے حامیوں کی کثیر تعداد کے ساتھ ریالی کی شکل میں گاندھی بھون پہنچے۔ کارکن جو ہاتھوں میں پارٹی پرچم اور پلے کارڈ تھامے ہوئے تھے لکشما ریڈی کو حلقہ اسمبلی اپل سے ٹکٹ دینے کا مطالبہ کررہے تھے ۔ گذشتہ انتخابات میں حلقہ اسمبلی اپل سے بی جے پی کے این وی وی ایس پربھاکر نے کامیابی حاصل کی تھی ۔ لکشما ر یڈی کا کہنا ہے کہ اس مرتبہ حلقہ اسمبلی اپل میں کانگریس کا موقف مستحکم ہے اگر پارٹی انہیں ٹکٹ دیتی ہے تو ان کی کامیابی یقینی ہے ۔ اپل میں کانگریس تمام10 بلدی ڈیویژن میں قابض ہے ۔ کانگریس سے متعلق عوام میں زبردست جوش وخروش پایا جاتا ہے۔ وہ پارٹی ٹکٹ کیلئے پارٹی قیادت سے نظر ثانی کا مطالبہ کرنے اپنے حامیوں کے ساتھ یہاں آئے ہیں۔ اسمبلی حلقہ نکریکل ( نلگنڈہ) کے سینکڑوں کانگریس کارکن اور خواتین کی کثیر تعداد نے اپنے پسند یدہ امیدوار ملا ریڈی پرسنا کمار کو ٹکٹ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے گاندھی بھون پر دھرنا دیا ۔ اس حلقہ سے سابق وزیر کومٹ ر یڈی کے حامی پی لنگیا کو ٹکٹ دینے کا ہائی کمان نے فیصلہ کیا ہے ۔ پرسنا کمار کا گروپ پی لنگیا کاکٹر مخالف ہے۔ اس دوران گاندھی بھون کے گیٹس پر پولیس کے مسلح دستہ متعین کرائے گئے ہیں جبکہ گاندھی بھون میں کوئی ذمہ دار قائد موجود نہیں ہے ۔ وہاں موجود قائدین احتجاجی کارکنوں کو سمجھانے اور انہیں صبر وتحمل کا مظاہرہ کرنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔ لیکن برہم کارکن نعرہ بازی کرتے ہوئے اپنا احتجاج جاری رکھا ہے۔

جواب چھوڑیں