کشمیری عسکریت پسندوں کو خودسپردگی کا موقع دیا جائے گا:لیفٹیننٹ جنرل اے کے بھٹ

فوج کی 15 ویں کور کے جنرل آفیسر کمانڈنگ (جی او سی) لیفٹیننٹ جنرل انیل کمار بھٹ نے کہا کہ کشمیری مسلح نوجوانوں کو تصادموں کے دوران بھی خودسپردگی اختیار کرنے کا موقع دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے لئے سب سے بڑا چیلنج یہ ہے کہ مقامی نوجوان جنگجوؤں کی صفوں میں شامل ہورہے ہیں تاہم انہوں نے دعویٰ کیا کہ گذشتہ کچھ مہینوں کے دوران کشمیری نوجوانوں کی جنگجوؤں کی صفوں میں شمولیت کے رجحان میں کمی دیکھی گئی۔لیفٹیننٹ جنرل بھٹ ہفتہ کو یہاں حضرت بابا پیام الدین ریشی المعروف بابا ریشی کی زیارت گاہ پر منعقدہ ’’منتِ امن ‘‘ تقریب کے حاشیہ پر نامہ نگاروں سے بات کررہے تھے ۔ ’’منت امن ‘‘ نام سے اس دعائیہ تقریب کا انعقاد سٹل لائٹ پروڈکشن اور بابا ریشی مارکیٹ ایسوسی ایشن نے فوج، پولیس ، وقف بورڈ اور گلمرگ ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کے اشتراک سے کیا تھا۔انیل کمار بھٹ نے کہا ’’میں بابا ریشی کی درگاہ پر جنگجوؤں کے بارے میں بات نہیں کرنا چاہتا۔ میرا یہاں کے نوجوانوں کے لئے پیغام ہے کہ آپ مین اسٹریم جوائن کریں گے تو آپ کا یہ فیصلہ تمہارے خود کے ساتھ ساتھ دیش اور ہمارے لئے بھی اچھا ثابت ہوگا۔ وہ جنگجو جو خودسپردگی اختیار کرنا چاہتے ہیں، انہیں اس کا موقع دیا جائے گا۔ آپریشن کے دوران بھی اگر کوئی مقامی جنگجو خودسپردگی اختیار کرنا چاہے گا تو اسے وہ موقع دیا جائے گا‘‘۔انہوں نے کہا ’’ہمارے لئے سب سے بڑا چیلنج یہ ہے کہ مقامی نوجوان جنگجوؤں کی صفوں میں شامل ہورہے ہیں۔ مجھے یہ کہتے ہوئے خوشی ہورہی ہے کہ پچھلے کچھ مہینوں سے اس میں کمی آئی ہے ۔ ہماری یہ بھرپور کوشش ہوتی ہے کہ مقامی نوجوان جنگجوؤں کی صفوں میں شامل نہ ہوں۔ جہاں تک غیرملکی جنگجوؤں کا سوال ہے، ہم ان کے خلاف آپریشن کرتے رہیں گے اور انہیں ہلاک کرتے رہیں گے‘‘۔ لیفٹیننٹ جنرل بھٹ نے منعقدہ تقریب کے بارے میں کہا ’’کشمیریت اور صوفی ازم یہاں کی ایک پہنچان ہے ۔ اسی کو بڑھاوا دینے کے لئے یہ پروگرام منعقد کیا گیا‘‘۔تقریب میں چنار کور کے میجر جنرل جی ایس راوت، جی او سی ڈیگرڈویژن اتل کمار، ڈی آئی جی بارہمولہ اور ضلع مجسٹریٹ بارہمولہ نے شرکت کی۔

جواب چھوڑیں