عوام سے دغابازی ‘مودی اورکے سی آرمیں مماثلت

چیف منسٹر پڈوچیری نارائن سوامی نے الزام عائد کیاکہ وزیر اعظم نریندر مودی اور کاگذار چیف منسٹر کے چندرشیکھررائو عوام سے کئے گئے وعدوں کوپورا کرنے میں یکسر ناکام رہے ہیں۔ انہوںنے وزیر اعظم کوبڑا مودی اور کے سی آر کوچھوٹا مودی قرار دیتے ہوئے کہاکہ حکمرانی میں دونوں مودی اورکے سی آر میں یکسانیت پائی جاتی ہے ۔ دونوں قائدین نے ساڑھے چارسالہ دور حکومت میں اپنے آپ کو مہاراجہ تصورکرتے ہوئے عوام کو اپنے آپ سے دوررکھا۔ یہاں تک کہ اپنے وزراء اور ارکان پارلیمنٹ واسمبلی کوبھی ملاقات کے لئے وقت نہیں دیا۔ جب تک عوام اور عوام کے نمائندوں سے ملاقات کوموقع نہیں دیا جاتا توپھرعوام کے مسائل سے کس طرح واقفیت حاصل کی جائے گی ۔نارائن سوامی آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ انہوںنے کہاکہ علحدہ تلنگانہ کی تشکیل میں سونیاگاندھی ‘منموہن سنگھ اور راہول گاندھی کااہم رول رہاہے ۔ سونیا گاندھی نے تلنگانہ کے عوام کے جذبات ‘طلباء ونوجوانوں کی قربانیوں سے متاثر ہوکر علحدہ تلنگانہ کے مطالبہ کوحقیقت میں تبدیل کردکھایا لیکن افسوس کی بات ہے کہ کے چندر شیکھر رائو اوران کے ارکان خاندان نے تلنگانہ کے لئے کچھ نہیں کیا۔ کے سی آر کے دورحکومت میں کسانوں ‘طلباء ونوجوانوں ‘خواتین ‘ غریب وکمزورطبقات کودھوکہ دیاگیا ۔ تلنگانہ میں سب سے زیادہ 4500کسانوں نے خودکشی کرلی ۔ جس کے لئے کے سی آر راست طورپر ذمہ دار ہیں ۔ کے سی آر نے زرعی ‘صنعتی ‘تعلیم ‘ صحت عامہ اوربہبودی شعبہ جات کو یکسر نظرانداز کردیا۔ کے سی آر کو5سال کے لئے عوام نے اقتدار دیاتھا لیکن افسوس کہ 9ماہ قبل اسمبلی تحلیل کردی گئی ۔ ان تمام سوالات کاکے سی آر کو جواب دیناہوگا۔ نارائن سوامی نے کہاکہ انہوںنے بحیثیت چیف منسٹر اپنے لئے کوئی علحدہ مکان کااستعمال نہیں کیا۔ وہ چیف منسٹر کیمپ آفس میں ہی قیام کررہے ہیں۔ وہ سرکاری کاراستعمال نہیں کرتے بلکہ اپنی ذاتی کاراستعمال کرتے ہیں ۔انہوںنے کہاکہ اب وقت آگیاہے کہ عوام کے سی آر کواقتدار سے بے دخل کردیں ۔انہوںنے ٹی آرایس کوبی جے پی کی بی ٹیم قرار دیتے ہوئے کہاکہ کے سی آر نے بی جے پی کے تمام مخالف عوام فیصلوں کی غیرمشروط تائید کی ہے ۔ بی جے پی کے اشاروں پرکے سی آر نے تیسرے محاذ کی تشکیل کی کوشش کی تھی لیکن کسی بھی سیکولر جماعت نے ان کی اس تجویز کی تائید نہیں کی ۔نارائن سوامی نے ٹی آرایس حکومت کو 4K‘(کے سی آر‘ کے ٹی آر ‘کویتااورکوٹمی) قرار دیا۔ تلنگانہ حکومت ان 4کے کے اطراف گھوم رہی ہے ۔ نارائن سوامی نے کہاکہ تلنگانہ میں ہرطرف کانگریس کی لہرچل رہی ہے ۔آئندہ انتخابات میں کانگریس کی زیر قیادت عظیم اتحاد کی حکومت قائم ہوگی۔ کانگریس پارٹی عوام سے کئے گئے تمام وعدوں کوپورا کرے گی۔انہوںنے کے سی آر کی حلیف جماعت ایم آئی ایم پربھی تنقید کی ۔پریس کانفرنس میں سکریٹری کانگریس ناصر حسین ایم پی ‘جی نارائن ریڈی کانگریس ترجمان ‘شراون کمار اوردوسرے موجودتھے۔

جواب چھوڑیں