پرچہ نامزدگیوں کے ادخال کی آج آخری تاریخ۔تلنگانہ میں انتخابی مہم میں شدت

تلنگانہ اسمبلی انتخابات جو7 دسمبر کو مقرر ہیں، کی مہم شدت اختیار کرتی جارہی ہے ۔ مختلف سیاسی جماعتوں کے اعلیٰ قائدین بشمول وزیر اعظم نریندر مودی ، بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ، صدر نشین یو پی اے سونیا گاندھی اور صدر کانگریس راہول گاندھی کے علاوہ دیگر قومی قائدین اس مہم میں حصہ لیں گے اور متعلقہ پارٹی کے انتخابی جلسوں سے خطاب کریں گے ۔ ریاست میں پرچہ نامزدگیوں کے ادخال کا عمل کل پیر19 نومبر کو ختم ہوگا ۔ تمام بڑی سیاسی جماعتوں جس میں حکمراں جماعت ٹی آر ایس، بی جے پی اور کانگریس کی زیر قیادت تشکیل دیئے گئے مہا کوٹمی کی حلیف تلگودیشم، سی پی آئی شامل ہیں، نے انتخابی مہم میں شدت پیدا کرنے کا منصوبہ بنایاہے ۔ کانگریس نے چیرپرسن یو پی اے سونیا گاندھی کے دورہ کا اعلان کردیا ہے ۔ تشکیل تلنگانہ کے بعد سونیا کایہ پہلا دورہ تلنگانہ رہے گا وہ،23 نومبر کو میڑچل میں پارٹی کے انتخابی جلسہ سے خطاب کریں گی ۔ توقع ہے کہ کانگریس کے صدر راہول گاندھی 28 اور 29 نومبر کے علاوہ 3دسمبر کو انتخابی دورہ کریں گے ۔ خازن پردیش کانگریس جی نارائن ریڈی نے یہ بات بتائی ۔ صدر ریاستی بی جے پی ڈاکٹر کے لکشمن نے بتایا کہ پارٹی کے قومی صدر امیت شاہ ،25 نومبر سے تلنگانہ کا تین روزہ انتخابی دورہ کریں گے جبکہ وزیر اعظم نریندر مودی دسمبر کے ابتدائی 4دنوں میں تلنگانہ آئیں گے ۔ بی جے پی کے قومی صدر نے ستمبر میں ہی ریاست میں پارٹی کی انتخابی مہم کا بگل بجاتے ہوئے ریاست کے دو مختلف مقامات پر جلسوں سے خطاب کیا تھا ۔ ٹی آر ایس کے سربراہ کے چندر شیکھر راؤ جو حکمراں جماعت کے اہم انتخابی چہرہ ہیں، جاریہ ہفتہ میں مسلسل انتخابی جلسوں سے خطاب کریں گے ۔ کارگذار چیف منسٹر کے فرزند کے ٹی آر اور ان کے بھانجے ٹی ہریش راؤ ( دونوں کارگذار وزرا) اسمبلی کی تحلیل کے بعد سے ریاست میں پارٹی کی انتخابی مہم کی باگ ڈور سنبھالے ہوئے ہیں۔ عظیم اتحاد کی حلیف تلگودیشم پارٹی نے ریاست میں پارٹی کی انتخابی مہم کیلئے این بالکرشنا جو آنجہانی این ٹی آر کے فرزند ہیں ، کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور تلگو فلموں کے ہیروز بھی ٹی ڈی پی کی انتخابی مہم میں شرکت کرنے کی توقع ہے ۔ تلنگانہ جنا سمیتی ( ٹی جے ایس ) جو مہا کوٹمی کی ایک حلیف جماعت ہے، کے صدر پروفیسر کودنڈا رام ، انتخابی مہم کے دوران مہا کوٹمی کے مشترکہ ایجنڈہ سے عوام کو واقف کرائیں گے ۔

جواب چھوڑیں