سونیا اور راہول گاندھی کی آج آمد

چیرپرسن پوپی اے سونیا گاندھی اور صدرکانگریس راہول گاندھی 23 نومبر کو میڑچل میں جلسہ عام سے خطاب کریں گے جس کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ صدر تلنگانہ کانگریس کمیٹی این اتم کمار ریڈی ، اے آئی سی سی مبصر شیوا کمار وزیر کرناٹک نے میڑچل پہنچ کر جلسہ عام کے مقام پر انتظامات کا جائزہ لیا۔ سونیا گاندھی کے سیاسی مشیر احمد پٹیل نے کل شام جلسہ عام کی تیاریوں کا جائزہ لیا ۔ اے آئی سی سی میڈیا کوآرڈینٹر کے بموجب سونیا گاندھی اور راہول گاندھی 23 نومبر کو 5بجے خصوصی طیارہ کے ذریعہ بیگم پیٹ ایر پورٹ پہنچیں گے ۔ 5:30 بجے میڑچل کیلئے بذریعہ کار روانہ ہوں گے ۔6 تا7:30بجے شام جلسہ عام سے خطاب کریں گے ‘ بعدازاں بیگم پیٹ ایر پورٹ پہنچیں گے ۔8 بجے شام دہلی کیلئے روانہ ہوجائیں گے۔ کارگذار صدر ریونت ریڈی کی نگرانی میں جلسہ گاہ پر بڑے پیمانہ پر انتظامات کئے جارہے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ سونیا گاندھی کا جلسہ تاریخی ہوگا ۔ تلنگانہ کے قیام کے بعد یہ ان کا پہلا دورہ ہوگا ۔ اس دوران اتم کمارریڈی ، احمد پٹیل ، سبی رام ریڈی( اراکین راجیہ سبھا) جے پال ریڈی ودیگر قائدین نے ناراض قائد بھکشاپتی گوڑ جنہوں نے حلقہ اسمبلی شیر لنگم پلی سے پارٹی ٹکٹ نہ ملنے پر باغی امیدوار کی حیثیت سے پرچہ نامزدگی داخل کیا تھا، انہیں دستبرداری کیلئے راضی کروالیا ۔ آج بھکشاپتی نے اپنا پرچہ واپس لے لیا ۔ اسمبلی حلقہ شیر لنگم پلی حلیف جماعت تلگودیشم کے حصہ میں چلے گیا ۔ ان کے علاوہ سابق مرکزی وزیر جے رام رمیش نے حلقہ اسمبلی میڑ چل کے باغی امیدوار جگیایادو سے ملاقات کرکے انہیں پرچہ نامزدگی واپس لینے کیلئے آمادہ کروالیا ، اور آج جگیا یادو بھی نامزدگی سے دستبردار ہوگئے ۔

جواب چھوڑیں