ایودھیا کے لوگوں کو چین سے رہنے دیا جائے: اقبال انصاری

 رام جنم بھومی۔ بابری مسجد ملکیت مقدمہ کے مسلم فریق اقبال انصاری نے ہفتہ کے دن کہا کہ وہ وی ایچ پی کی دھرم سبھا سے قبل ایودھیا میں کئے گئے سیکوریٹی انتظامات سے مطمئن ہیں۔ انہوں نے ایودھیا میں اس طرح کی بھیڑ اکٹھا کرنے والے قائدین کی نیت پر سوال اٹھایا۔ انہوں نے پی ٹی آئی سے کہا کہ مندر۔ مسجد معاملہ میں کسی کو کوئی مسئلہ ہے تو وہ دہلی یا لکھنو جاسکتا ہے۔ ہاشم انصاری مرحوم کے لڑکے اقبال انصاری نے کہا کہ اترپردیش ودھان سبھا یا پارلیمنٹ کا گھیراؤ کیا جاسکتا ہے۔ ایودھیا کے لوگوں کو سکون سے رہنے دیا جائے۔ انہوں نے ایودھیا میں بھیڑ اکٹھا کرنے اور مقامی لوگوں کے لئے مسائل پیدا کرنے والے قائدین کی نیت پر سوال اٹھایا۔ انہوں نے تاہم سیکوریٹی انتظامات پر اظہار ِ اطمینان کیا۔ اقبال انصاری اپنے والد کے انتقال کے بعد ایودھیا کیس میں مسلم فریق بنے ہیں۔

جواب چھوڑیں