سناتن سنستھا پر ایس آئی ٹی کا شکنجہ سخت۔گوری لنکیش قتل کیس میں زائد چارج شیٹ داخل

 صحافی وحقوق کارکن گوری لنکیش کی ہلاکت کے واقعہ کی چھان بین کرنے والی خصوصی تحقیقاتی ٹیم ( ایس آئی ٹی) نے شہر کی ایک عدالت میں زائد چارج شیٹ داخل کردی ہے جس میں دائیں بازو کی ہندوتنظیم سناتن سنستھا کو ملزم بنایاگیا ہے۔ 9,325 صفحات پر مشتمل یہ چارج شیٹ کل شام پرنسپال سیول وسیشنس کورٹ میں پیش کی گئی۔ اِس چارج شیٹ میں یہ بھی کہا گیا کہ گوری لنکیش کو ہلاک کرنے کی سازش تقریباً5سال سے تیار کی جارہی تھی۔ چارج شیٹ میں یہ بھی کہا گیا کہ گوا میں قائم سناتن سنستھا میں موجود ایک نیٹ ورک نے شخصی وجوہات کے بغیر گوری لنکیش کو نشانہ بنایا۔ ایس آئی ٹی کے ایک اعلیٰ عہدیدار نے یہاں پی ٹی آئی کو بتایاکہ ’’ سناتن سنستھا کے ارکان مذکورہ واقعہ میں ملوث ہیں۔ ہم نے اُنہیں ملزم بنایا ہے‘ ہم نے مذکورہ تنظیم کی حلیف تنظیموں کا بھی نام لیا ہے‘‘۔ اسی دوران چارج شیٹ پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے سناتن سنستھا نے گوری لنکیش کی ہلاکت سے اپنے مبینہ ربط ضبط کی تردید کردی ہے اور کہا ہے کہ ملزمین میں سے کوئی بھی‘ اُس کا رکن نہیں ہے۔ دریں اثناء ڈپٹی چیف منسٹر کرناٹک جی پرمیشورا نے جو وزارت داخلہ کے قلمدان کے بھی انچارج ہیں‘ آج کہا کہ حکومت‘ گوری لنکیش کی ہلاکت میں ملوث تنظیموں پر امتناع عائد کرنے کے بارے میں کوئی فیصلہ کرے گی۔ اُنہوںنے اخبار نویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے‘ تحقیقات میں تاحال ہوئی پیشرفت کے بارے میں انکشاف کرنے سے انکار کردیا۔

جواب چھوڑیں