استھانہ کے خلاف سنگین الزامات کی مکمل تحقیقات ضروری: آلوک ورما

سی بی آئی سربراہ آلوک ورما نے اسپیشل ڈائرکٹر سی بی آئی راکیش استھانہ کے خلاف ایف آئی آر کی مدافعت کرتے ہوئے جمعہ کے دن کہا کہ ان کے نائب کے خلاف کرپشن اور جبری وصولی کے سنگین الزامات کی مکمل تحقیقات ضروری ہیں۔ انہوں نے دہلی ہائی کورٹ میں استھانہ کی درخواست کی مخالفت کی۔ استھانہ اپنے خلاف درج ایف آئی آر رد کرانے ہائی کورٹ سے رجوع ہوئے تھے۔ ورما نے کہا کہ استھانہ کی اس درخواست میں دم نہیں اور اس کا واحد مقصد انہیں (ورما ) بدنام کرنا ہے۔ دہلی ہائی کورٹ میں جو سماعت ہورہی ہے وہ سپریم کورٹ سے مختلف ہے جس نے ورما کی درخواست پر اپنا فیصلہ محفوظ رکھا ہے۔ ورما نے انہیں بے اختیار کردینے کے مودی حکومت کے فیصلہ کو چیلنج کیا تھا۔ ورما نے دہلی ہائی کورٹ میں اپنے حلف نامہ میں کہا کہ شکایت کنندہ ستیش بابو سانا نے ایک مخصوص کیس سے نمٹنے میں کرپشن‘ جبری وصولی اور زیادتی کے سنگین الزامات استھانہ پر عائد کئے۔ سی بی آئی کے ذمہ دار عہدیداروں کے لئے ایف آئی آر درج کرنا لازم تھا۔ استھانہ کے خلاف انتہائی قابل اعتراض مواد ہے اور مکمل تحقیقات ضروری ہیں۔ انہوں نے گذارش کی کہ استھانہ کی درخواست خارج کردی جائے۔

جواب چھوڑیں