وجئے مالیا کی درخواست پر ای ڈی کو سپریم کورٹ کی نوٹس

سپریم کورٹ نے جمعہ کے دن صنعتکار وجئے مالیا کی درخواست پر انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ(ای ڈی) کو نوٹس جاری کی۔ وجئے مالیا نے انہیں بھگوڑا معاشی مجرم قراردینے ممبئی کی ایک عدالت میں جاری کارروائی کو چیلنج کیا ہے۔ چیف جسٹس رنجن گوگوئی اور جسٹس ایس کے کول پر مشتمل بنچ نے تحقیقاتی ایجنسی سے جواب مانگا۔ ای ڈی نے خصوصی عدالت سے رجوع کیا تھا کہ لندن میں مقیم صنعتکار کو ایف ای او ایکٹ 2018 کے تحت بھگوڑا معاشی مجرم قراردیا جائے۔ سپریم کورٹ نے مالیا کی درخواست پر نوٹس تو جاری کردی لیکن ممبئی کی خصوصی عدالت میں جاری کارروائی روکنے سے انکار کردیا۔ بمبئی ہائی کورٹ نے حال میں مالیا کی درخواست خارج کردی تھی۔ صنعتکار نے ہائی کورٹ کے اس اقدام کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔ اگر کوئی شخص بھگوڑا معاشی مجرم قرار پاتا ہے تو کارروائی کرنے والی ایجنسی کو اختیار مل جاتا ہے کہ وہ ملزم کی جائیداد ضبط کرلے۔ وجئے مالیا کے وکیل نے کہا تھا کہ ہم بھی واجبات کی ادائیگی کے لئے بے قرار ہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ جنہوں نے قرض دیا ہے انہیں ان کی رقومات واپس مل جائیں۔ ہم نہیں چاہتے کہ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ جائیدادیں ضبط کرے۔ جائیدادوں کی ضبطی سے واجبات کی ادائیگی کا عمل متاثر ہوگا۔

جواب چھوڑیں