منتخب سرپنچوں اور نائب سرپنچوں کو مکمل تربیت فراہم کرنے کی ہدایت

چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے عہدیداروں کو عنقریب منعقد شدنی پنچایت راج انتخابات میں منتخب ہونے والے سرپنچوں اور نائب سرپنچوں کو فروری‘ مارچ اور اپریل میں ذمہ داریوں کے متعلق مکمل تربیت فراہم کرنے کی ہدایت دی۔ آج پرگتی بھون میں پنچایت راج کے عہدیداروں کے ساتھ منعقدہ جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے سبزہ کے فروغ اورصاف صفائی کے کاموں کو یقینی بنانے اور بہترین بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے متعلق منتخب پنچایت راج اداروںکے ارکان میں شعور بیدار کرنے کے لئے کام کیا جانا چاہئے۔ ہر پنچایت راج ادارہ کو نئے قوانین کے مطابق تلگو میں طبع کردہ کتابچہ فراہم کیا جانا چاہئے۔انہوںنے حال ہی میں تقرر کردہ پنچایت راج سکریٹریز اور منتخب ہونے کے بعد سرپنچوں کو تعاون و اشتراک کی افادیت سے واقف کراتے ہوئے دیہاتوں کی ہمہ جہت ترقی کے لئے کام کرنے کی ہدایت دی چیف منسٹر نے کہا کہ ریاست میں بہت جلد پنچایت راج انتخابات منعقد ہونے جارہے ہیں۔ حکومت کی جانب سے ہر پنچایت کے لئے ایک پنچایت سکریٹری کا تقرر عمل میں لایا جائے گا اور دیہات کی ترقی کے لئے سرپنچ اور پنچایت سکریٹری کو ذمہ داری تفویض کی جائے گی۔ ایسے میں پنچایت راج اداروں کو مکمل کارکرد ہونے میں معمولی تاخیر بھی ہوسکتی ہے۔ مرکزی حکومت ‘ علیٰ الحساب بجٹ پیش کرنے جارہی ہے۔ ریاستی حکومت بھی علی الحساب بجٹ پیش کرسکتی ہے۔ پارلیمانی انتخابات کے بعد مکمل بجٹ پیش کیا جائے گا اور مکمل بجٹ میں پنچایت راج اداروں کو فنڈس مختص کئے جائیں گے۔ اس وقت تک عہدیداروں کو چاہئے کہ سرپنچوں اور ولیج سکریٹریز کو مکمل تربیت فراہم کرتے ہوئے دیہی ترقی کو یقینی بنانے کی کوشش کریں۔ اس موقع پر حکومت کے مشیر خاص راجیو شرما‘ اراکین اسمبلی پرشانت ریڈی‘ ایم جناردھن ریڈی‘ کے یادیا‘ پرنسپل سکریٹری سی ایم او بھوپال ریڈی و دیگر موجودتھے۔

جواب چھوڑیں