پورندیشوری کی وائی ایس آرسی پی میںشمولیت متوقع

بانی تلگودیشم پارٹی این ٹی رامارائو کی دختر وسابق مرکزی وزیر ڈی پورندیشوری نے وائی ایس آر کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے کا فیصلہ کیاہے ۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ یوپی اے دور میں مرکزی وزیر رہ چکی پورندیشوری نے آندھراپردیش کی تقسیم کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کانگریس سے استعفیٰ دے کر بی جے پی میںشمولیت اختیار کرلی تھی۔ اطلاعات کے مطابق وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے صدر وائی ایس جگن موہن ریڈی کی جانب سے پورندیشوری کے فرزند ڈی ہتیش کو پرچورحلقہ اسمبلی سے پارٹی ٹکٹ دینے کا تیقن دیتے ہوئے ان کی وائی ایس آر کانگریس میں شمولیت کاراستہ ہموار کردیاتھا اگر چیکہ جگن موہن ریڈی نے سابق میں پرچور حلقہ اسمبلی کے لئے کسی دوسرے قائد کو نگران کارمقرر کیاتھا مگر قوی امکان ہے کہ ڈی ہتیش کوہی پرچور سے پارٹی امیدوار بنایا جائے گا ۔ وائی ایس آر کانگریس قائدین کا احساس ہے کہ دگوباٹی خاندان کے وائی ایس آر کانگریس میں شمولیت اختیار کرنے سے پارٹی کو کچھ حدتک کماطبقہ کے ووٹ حاصل کرنے میں کامیابی حاصل ہوگی جبکہ یہ بات ڈھکی چھپی نہیںہے کہ کما طبقہ کی تائید تلگودیشم پارٹی کے ساتھ ہے ۔ دگوباٹی خاندان کے لوگوں کاماننا ہے کہ پورندیشوری کے خاوند ڈی وینکٹیشوررائو کی جانب سے کرائے گئے سروے میں پتہ چلاہے کہ اگرہتیش ‘وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے ٹکٹ پراسمبلی انتخابات میںحصہ لیتے ہیں توان کی کامیابی کے امکانات روشن ہیں ۔بتایا جارہاہے کہ 21جنوری کوڈی وینکٹیشوررائو ان کی اہلیہ پورندیشوری اور فرزند ہتیش وائی ایس آر کانگریس میں شمولیت اختیار کرلیںگے۔

جواب چھوڑیں