اپوزیشن کا مہا گٹھ بندھن ناکام تجربہ۔ملک کو مجبور نہیں مضبوط سرکار کی ضرورت: وزیراعظم مودی

وزیراعظم نریندر مودی نے ہفتہ کے دن اپوزیشن کے مہاگٹھ بندھن کو ناکام تجربہ قراردیتے ہوئے خارج کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک شخص کو ہرانے اور مجبور حکومت بنانے سیاسی جماعتیں متحد ہورہی ہیں جبکہ ملک کو مضبوط حکومت کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کے دور میں ایک بھی اسکام نہیں ہوا جو اس بات کا ثبوت ہے کہ کرپشن کے بغیر حکومت چلائی جاسکتی ہے۔ نئی دہلی کے رام لیلا میدان پر 2 روزہ بی جے پی قومی کنونشن کو سمیٹتے ہوئے انہوں نے اپوزیشن پر جم کر تنقید کی اور کہا کہ یہ جماعتیں اپنے مفاد کے لئے متحد ہورہی ہیں جبکہ بی جے پی کی زیرقیادت این ڈی اے حکومت ملک کے مفاد میں لڑرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اِن دنوں مہا گٹھ بندھن کو بڑھاوا دینے کی مہم چل رہی ہے جو ہندوستان کی سیاسی تاریخ میں ناکام تجربہ رہا ہے۔ کانگریس ‘ اس کے کلچر اور بدعنوانیوں کے خلاف بطور احتجاج وجود میں آنے والی جماعتیں اب متحد ہورہی ہیں۔ مودی نے یہ بات بیشتر علاقائی جماعتوں پر راست تنقید کرتے ہوئے کہی جو قومی سطح پر کانگریس کے ساتھ مہا گٹھ بندھن کے لئے کوشاں ہیں۔ پی ٹی آئی کے بموجب وزیراعظم نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں‘ اقرباپروری اور کرپشن کو بڑھاوا دینے کی نیت سے مجبور حکومت قائم کرنا چاہتی ہیں۔ انہوں نے رام مندر مسئلہ پر کانگریس کو گھیرا اور کہا کہ یہ پارٹی ‘ ایودھیا تنازعہ کا حل نہیں چاہتی۔ کانگریس اپنے وکیلوں کے ذریعہ رکاوٹیں کھڑی کررہی ہے۔

جواب چھوڑیں