چیف منسٹر نے دریائے کرشنا پر برج کا سنگ بنیاد رکھا

آندھرا پردیش کے چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے یہاں آج ابراہیم پٹنم کے قریب پوترسنگم کے مقام پر مشہور برج کا سنگ بنیاد رکھا یہ برج دریائے کرشنا پر تعمیر کیا جارہا ہے۔ انہوںنے ڈرکنگ واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کا بھی سنگ بنیاد رکھا ۔ یہ مشہور وروایتی برج دریائے کرشنا پر1,387 کروڑ روپے کے تخمینہ مصارف سے تعمیر کیا جائے گا ۔ یہ برج، صدر مقام امراوتی سٹی کو حیدرآباد نیشنل ہائی وے سے مربوط کرے گا ۔3.20 کیلو میٹر لمبا یہ برج 6لین پر مشتمل رہے گا ۔ اگر اس برج کی تعمیر مکمل ہوجائے گی تب امراوتی سے حیدرآباد اور جگدل پور کی مسافت40کیلو میٹر کم ہوجائے گی ۔ اس آئیکانک برج کو دوسال کے اندر تعمیر کیا جائے گا ۔ نائیڈو نے شہر وجئے واڑہ کے نواح میں پوترسنگم کے مقام پر جہاں دریائے گوداوری اور کرشنا آپس میں ملتی ہیں، دو پائیلان کی رونمائی کی رسم اجرائی انجام دی ۔ نائیڈو نے ڈرکنگ واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کی سنگ بنیاد تختی کی بھی رسم رونمائی انجام دی ۔ اس پلانٹ کی تعمیر پر745.65 کروڑ روپے کی لاگت آئے گی ۔ یہ پلانٹ ریاست کے نئے صدر مقام امراوتی کے عوام کے پینے کے پانی کی ضروریات کی تکمیل کرے گا ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ یہ مشہور برج، دریائے کرشنا کے شمال اور جنوب کی سمت کے علاقوں کی ترقی میں مدد گار ثابت ہوگا۔ نائیڈو نے اس مشہور برج کو کچی پوڈی برج سے موسوم کرنے کا اعلان کیا اور کہا کہ صدر مقام امراوتی شہر میں وینکٹیشورا مندر، ایک گرجا گھر اور ایک مسجد تعمیر کی جائے گی ۔ انہوںنے کہا کہ مالی بحران کے باوجود ریاست کی تلگودیشم حکومت، پڑوسی ریاست تلنگانہ سے زیادہ اے پی میں فلاحی اسکیمات کو روبعمل لارہی ہے ۔ اس موقع پر وزرا ڈی او ما مہیشو راؤ اور کے رویندر، ارکان پارلیمنٹ کے سرینواس اور جی جئے دیو، ضلع کلکٹر کرشنا بی لکشمی کا نتم اور دیگر موجود تھے ۔

جواب چھوڑیں