تلنگانہ میں جی ایس ٹی ادا نہ کرنے والوں کی شناخت

سنٹرل جی ایس ٹی انٹلیجنس ونگ نے ریاست تلنگانہ میں ٹیکس کی ادائیگی سے گریز کرنے والے103 ، افراد کی شناخت کی ہے اور یہ افراد ، حکومت کو جملہ244.25 کروڑ روپے ٹیکس واجب الدا ہیں۔ جی ایس ٹی انفورسمنٹ نے ٹیکس ادا نہ کرنے والوں میں سے 71 افراد کے خلاف کیس درج کرتے ہوئے دسمبر2018 میں ان سے 95.83 کروڑ ٹیکس وصول کیا ہے لیونیہ ریسارٹس کے سی ایم ڈی بھی ان71 افراد میں شامل ہیں جو قانون کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوئے ہیں۔ ریاست آندھرا پردیش میں ٹیکس کی ادائیگی سے بچنے والوں کی تعداد38 بتائی گئی ہے۔ مگر مالیاتی دھوکہ دہی کی شرح 359.01 کروڑ بتائی گئی ہے ۔ تاجرین ، صارفین سے خدمات کی فراہمی پر جی ایس ٹی وصول کرتے ہیں مگر وصول شدہ جی ایس ٹی کی رقم حکومت کو ادا کرنے سے گریز کرتے ہیں۔ وصول شدہ رقم کو اپنے نجی کام اور دیگر معاملتوں میں منتقل کردئے ہیں۔ ملک بھر میں تاجروں سے12,766 کروڑ جی ایس ٹی وصول طلب ہے مگر انفورسمنٹ نے سال 2017-18 کے دوران ان تاجروں سے 7,909.96 کروڑ روپے وصول کئے ہیں۔ سنٹرل اور اسٹیٹ جی ایس ٹی ٹیم، ٹیکس ادا نہ کرنے والوں کے خلاف مقدمات درج کررہی ہے۔ سنٹرل جی ایس ٹی ٹیم کے ایک سینئر عہدیدار نے یہ بات بتائی ۔ قانون کے مطابق ٹیکس کی ادائیگی سے گریز کرنا جرم ہے ۔ ایک کروڑ تک ٹیکس کے ڈی فالڈرس کو3ماہ کی جیل کی سزا ہوسکتی ہے ۔ ٹیکس ادا نہ کرنیوالوں کی شناخت اور انہیں پکڑنے کے طریقہ کار کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں سینئر عہدیدار نے بتایا کہ دفتر، مختلف اسٹاک ہولڈرس سے وصول ہونے والے ردعمل کو قبول کرتی ہے۔

جواب چھوڑیں