طلاق ثلاثہ آرڈیننس پھر جاری

حکومت نے طلاقِ ثلاثہ (وقتِ واحد میں 3طلاق) کو ممنوع قراردینے پھر آرڈیننس جاری کیا ہے۔ ہفتہ کے دن جاری مسلم ویمن (پروٹکشن آف رائٹس آن میریج )آرڈیننس 2019کے تحت طلاقِ ثلاثہ غیرقانونی ہوگی اور شوہر کو 3 سال کے لئے جیل جانا پڑے گا۔ لوک سبھا میں بل دسمبر میں منظورہوگیا لیکن راجیہ سبھا میں زیرالتواء ہے۔ بل کو پارلیمانی منظوری نہ ملنے کے باعث دوبارہ آرڈیننس جاری کرنا پڑا۔ آرڈیننس میں طلاقِ ثلاثہ کو تعزیری جرم قراردیاگیا ہے لیکن ملزم، سماعت شروع ہونے سے قبل ضمانت لینے مجسٹریٹ سے رجوع ہوسکتا ہے۔

جواب چھوڑیں